دنیا کی تیز ترین گاڑی جو 1600 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے سفر کرسکتی ہے

دنیا کی تیز ترین گاڑی جو 1600 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے سفر کرسکتی ہے
دنیا کی تیز ترین گاڑی جو 1600 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے سفر کرسکتی ہے

  

لندن (نیوز ڈیسک) تقریباً دو دہائیاں قبل جب امریکی ریاست نیواڈا کے صحرا میں تھرسٹ ایس ایس سی نامی کار نے آواز کی رفتار سے زیادہ رفتار پر دوڑنے کا مظاہرہ کیا تو نیا عالمی ریکارڈ قائم ہو گیا، مگر برطانوی انجینئروں نے اب اس ریکارڈ کو بھی توڑنے کی تیاری مکمل کر لی ہے ۔

پاکستانی ڈرائیور ایک ایسی ٹویوٹا کرولا گاڑی سڑک پر لے آیا کہ دیکھنے والوں کی آنکھیں کھلی کی کھلی رہ گئیں، دیکھ کر آپ کو بھی اپنی آنکھوں پر یقین نہیں آئے گا

زمین پر زیادہ سے زیادہ رفتار کا ریکارڈ قائم کرنے کے لئے برطانوی ٹیم نے 2007ءمیں کام شروع کیا۔ رچرڈ نوبل کی قیادت میں کام کرنے والی اس ٹیم کا ہدف 1600 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے دوڑنے والی کار تیار کرنا تھا۔ اس مقصد کے لئے انہوں نے راکٹ سائنس کے ماہر ایک انجینئر کی خدمات حاصل کیں تاکہ وہ برطانیہ کی تاریخ کا سب سے بڑا ہائبرڈ راکٹ تیار کرسکے جبکہ کار کے ڈھانچے کی تیاری کے لئے ایک سٹرکچر انجینئر کی مدد لی گئی۔ اس منفرد گاڑی کے ڈیزائن کے لئے ایروڈائنامک انجینئروں نے بھی اپنا حصہ ڈالا۔ نو سال کی محنت کے بعد اب یہ شاہکار تیار ہے اور اسے جنوبی افریقہ کی ٹیسٹ سائٹ ہاکس سکین پین پر لیجانے کی تیاریاں مکمل ہوچکی ہیں۔ انتہائی طاقتور راکٹ سے چلنے والی اس کار کو کارگو لاجک ائیربوئنگ 747 پر جنوبی افریقہ لیجایا جائے گا۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ اس کار کا ٹیسٹ رن انتہائی خطرناک مرحلہ ہوگا کیونکہ اگر راکٹ کی طاقت کا جھکاﺅ زمین کی جانب ہوا تو یہ کار زمین میں دھنس جائے گی اور اگر اس کا جھکاﺅ اوپر کی طرف ہوا تو یہ سیدھی جانے کی بجائے آسمان کی جانب اڑ جائے گی۔ عام انجن کی بجائے راکٹ کی طاقت سے1600 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے دوڑنے والی کار کے ٹیسٹ رن پر دنیا بھر کے ماہرین اور شائقین کی نظریں لگی ہیں اور ہر کوئی یہ دیکھنے کو بے تاب ہے کہ اس کا پہلا سفر کیسا رہے گا۔ اگر یہ ٹیسٹ کامیاب رہا تو ایک ایسا عالمی ریکارڈ بھی بن جائے گا کہ جسے توڑنا غیر معمولی حد تک مشکل ہو گا۔

مزید : ڈیلی بائیٹس