پاکستان میں 4سال تک ای کامرس کے شعبہ کا حجم ایک ارب ڈالر ہو جائے گا

پاکستان میں 4سال تک ای کامرس کے شعبہ کا حجم ایک ارب ڈالر ہو جائے گا

اسلام آباد (اے پی پی) پاکستان بسکٹ اینڈ کنفیکشنری مینوفیکچررز ایسوسی ایشن (پی بی سی ایم اے)نے کہا ہے کہ چینی کی قیمتوں میں اضافہ کی وجہ سے انکے کاروباری اخراجات میں اضافہ ہوا ہے ۔ پی بی سی ایم اے کے بیان کے مطابق چینی کی قیمتیں 63سے 65روپے فی کلو گرام سے بڑھ کر 70روپے فی کلو گرام تک پہنچ چکی ہیں، خوردہ فروش چینی کی قیمتوں میں حالیہ اضافے کا الزام تھوک فروشوں پر عائد کر رہے ہیں جبکہ تھوک فروش کا کہنا ہے کہ یہ اضافہ چینی تیار کرنے والے کارخانوں کی جانب سے کیا گیا ہے ۔ پی بی سی ایم اے کے سینئر وائس چیئرمین رئیس احمد نے کہا ہے کہ چینی کی درآمدات پر عائد ریگولیٹری ڈیوٹی کا خاتمہ کیا جائے تاکہ چینی کی قیمتوں کو کم کیا جا سکے جس سے شعبہ کے کاروباری اخراجات کی کمی واقع ہوگی ۔

مزید : کامرس