دھرنے دینے والے پھر بلوں سے باہر نکل آئے ہیں ،قوم ایسے عناصر کا راستہ روکے گی :شہباز شریف

دھرنے دینے والے پھر بلوں سے باہر نکل آئے ہیں ،قوم ایسے عناصر کا راستہ روکے گی ...

لاہور(جنرل رپورٹر) وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف نے شیخوپورہ کے علاقے کالاشاہ کاکومیں پاکستان میں گاڑیوں کی چیکنگ اور سرٹیفکیشن کے پہلے جدید ترین نظام وہیکل انسپکشن اینڈ سرٹیفکیشن سسٹم(VICS) کا افتتاح کر دیا۔ وزیراعلیٰ نے نئے نظام کے افتتاح کے بعد کالاشاہ کاکو میں سٹیشن کا دورہ کیا اور گاڑیوں کی انسپکشن اور سرٹیفکیشن کے نظام اور گاڑیوں کی انسپکشن اور سرٹیفکیشن کے تمام مراحل کا تفصیلی جائزہ لیا۔ اس موقع پر وزیراعلیٰ کو گاڑیوں کی انسپکشن اور سرٹیفکیشن کے بارے میں بریفنگ بھی دی گئی۔ وزیراعلیٰ نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سویڈن کے معروف بین الاقوامی ادارے اوپس(OPUS) کے تعاون سے سڑکوں پر سفر کرنے والوں کی زندگیاں محفوظ بنانے کیلئے یہ جدید ترین نظام متعارف کرایا گیا ہے۔ اس نظام سے انسانی زندگیاں محفوظ ہوں گی اور اس کا دائرہ کار پورے پنجاب تک بڑھایا جائے گا۔ اس نظام سے گاڑیوں کی چوری کے واقعات میں بھی کمی آئے گی۔ وزیراعلیٰ نے بعدازاں وہیکل انسپکشن اینڈسرٹیفکیشن سسٹم کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب حکومت نے ایک بہت بڑا پروگرام شروع کیا ہے جس کا آغاز آج شیخوپورہ کے علاقے کالاشاہ کاکو سے کیا جا رہا ہے۔ 2017ء کے اختتام تک پنجاب میں مجموعی طور پر 39 وہیکل انسپکشن اینڈ سرٹیفکیشن سسٹم کے تحت سٹیشن قائم کئے جائیں گے جبکہ لاہور میں اس ضمن میں 3 سنٹرز قائم کئے جائیں گے اور اس بڑے پروگرام کا دائرہ کارپورے پنجاب تک پھیلا دیا جائے گا۔ انہو ں نے کہا کہ یہ بہت بڑا پروگرام اس لئے نہیں کہ اس پر بہت لاگت آئی ہے یا اس کا سائز بڑا ہے بلکہ یہ اس لئے شاندار پروگرام ہے کہ اس کے ذریعے سڑکوں پر سفر کرنے والوں کی زندگیوں کو محفوظ بنایا جا سکے گا۔ وزیراعلیٰ نے پروگرام کو مکمل کرنے کے حوالے سے صوبائی وزیر قانون رانا ثناء اللہ، چیف سیکرٹری، سیکرٹری ٹرانسپورٹ اور اوپس کمپنی کے حکام کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں یہ اپنی نوعیت کا پہلا منصوبہ ہے جس پر ایک ارب روپے لاگت آئے گی اور اس کا مقصد صرف اور صرف عام آدمی اور مسافروں کی زندگیوں کو محفوظ بنانا ہے۔ انہو ں نے کہا کہ انتہائی افسوس کی بات ہے کہ بوسیدہ اور دھواں چھوڑتی گاڑیاں انسانو ں کی زندگیوں سے کھیل رہی ہیں۔ اس نئے نظام سے پرانا سسٹم یکسر بدل جائے گا۔ محض خراب گاڑیوں اور بریکوں کے باعث مسافروں کی زندگیوں کا چلے جانا بہت بڑی ناانصافی اور ظلم و زیادتی ہے۔ اس نئے نظام میں جو ٹرانسپورٹرز اور گاڑیاں چلانے والے رضاکارانہ تعاون کریں گے ہم انہیں سر آنکھوں پربٹھائیں گے جبکہ تعاون نہ کرنے والے تھانوں اور جیلوں میں جائیں گے۔ بے گناہ اور معصوم انسانی جانو ں کے ضیاع کے متحمل نہیں ہوسکتے۔ انہوں نے کہا کہ کالاشاہ کاکو میں وہیکل انسپکشن اینڈ سرٹیفکیشن سسٹم کے تحت بنایا جانے والا سنٹر مکمل طور پر کمپیوٹرائزڈ ہے اور یہاں گاڑیو ں کی چکنگ کیلئے جدید آلات لگائے گئے ہیں ۔وزیراعلیٰ نے کہا کہ وزیراعظم محمد نوازشریف کی سربراہی اور رہنمائی میں یہ تمام شاندار اقدامات کئے جا رہے ہیں۔ اس کے ساتھ ہم نے ٹریفک نظام کو بھی بہتر بنانا ہے۔ میں نے خود دیکھا ہے کہ ٹریفک کا عملہ سڑکوں پر بے پرواہ ہو کر موبائل فونز پر مصروف رہتا ہے اور ٹریفک نظام کو رواں دواں رکھنے پر توجہ نہیں دی جاتی۔ میں انسپکٹر جنرل پولیس کو مخاطب ہو کر کہتا ہوں کہ وہ پنجاب کے ٹریفک نظام کو درست کرنے کیلئے فوری طور پر اقدامات کریں، اب مزید مہلت نہیں دی جائے گی۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ کون نہیں جانتا کہ اس ملک میں جعلی ڈرائیونگ لائسنس نہیں بنتے اور جعلسازی سے لائسنس حاصل کرنے والے بھی بے احتیاطی کے ساتھ گاڑیاں چلا کر حادثات کا موجب بنتے ہیں۔ اب پنجاب حکومت نے ڈرائیونگ لائسنسنگ کے نظام کو درست کرنے کیلئے ڈرائیونگ لائسنسنگ اتھارٹی بنانے کا فیصلہ کیا ہے جو وہیکل انسپکشن اینڈ سرٹیفکیشن سسٹم کی طرز پر کام کرے گی۔ انہو ں نے کہا کہ ہمیں ذمہ داری کے ساتھ اپنے فرائض کا احساس کرنا چاہیئے اور ان کی ادائیگی کیلئے کوئی کسر اٹھا نہ رکھی جائے۔ ڈرائیوسنگ لائسنسنگ کے نظام میں کرپشن اور رشوت عام ہے اور ملی بھگت کے تحت جعلی ڈرائیونگ لائسنس جاری ہوتے ہیں لیکن نئے سسٹم کے تحت تمام نظام کو آؤٹ سورس کیا جا رہا ہے جس سے ڈرائیونگ لائسنسنگ کے نظام میں بہتری آئے گی۔ سیکرٹری ٹرانسپورٹ نے منصوبے کی افادیت کے بارے میں بتاتے ہوئے کہا کہ اس پروگرام کے تحت اوپس کمپنی مجموعی طورپر39سینٹرز قائم کرے گی۔کالاشاہ کاکو اورگرین ٹاؤن لاہور میں 2سینٹرز مکمل ہوچکے ہیں ۔چےئرمین اوپس گروپ کارل میگنس گریکو(Mr. Carl Magnusgreko) نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہماری کمپنی روڈ سیفٹی کے حوالے سے دنیا بھر میں کام کررہی ہے اورجب میں 2013میں پہلی مرتبہ پنجاب آیاتو یہاں کے روڈ انفراسٹرکچر سے بہت متاثرہوا۔ وزیراعلیٰ شہبازشریف کی قیادت میں میٹروبس سسٹم بھی شاندار کام کررہا ہے تاہم انفراسٹرکچر کے تحت روڈ سیفٹی کے حوالے سے اقدامات بھی ضروری ہیں اور ہماری کمپنی پنجاب حکومت کے ساتھ ملکر اس پروگرام کو تیزی سے آگے بڑھائے گی۔سویڈن کی سفیرانگریڈ جوہانسن (Ms.Ingrid Johansson)نے کہا کہ پنجاب حکومت کے ساتھ روڈ سیفٹی کے اہم شعبہ میں کام کرکے بہت خوشی ہوئی ہے اوریہ پروگرام انسانی زندگیوں کے تحفظ میں اہم کردارادا کرے گا۔سویڈن کی حکومت پاکستان کے ساتھ تجارت اورمعاشی تعلقات کو مزید فروغ دے گی۔وفاقی وزیر رانا تنویر حسین ،صوبائی وزیررانا ثناء اللہ ، چیف سیکرٹری،اراکین قومی و صوبائی اسمبلی ، اوپس گروپ کے اعلی حکام اورلوگوں کی بڑی تعداد نے تقریب میں شرکت کی ۔

ضرور پڑھیں: سوچ کے رنگ

لاہور(جنرل رپورٹر) وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف نے کہا ہے کہ محنت اورجذبے سے قوم کے نونہالوں کی آبیاری کرنے اورانہیں زیور تعلیم سے آراستہ کرنیوالے اساتذہ ہمارے سروں کے تاج ہیں ۔میٹرک کے امتحانات میں پوزیشن ہولڈرز محنت کشوں کی بچیوں کو تعلیم میں مالی معاونت فراہم کرنیوالی اساتذہ قوم کی ہیرواور ہم سب کیلئے قابل احترام ہیں اور ہم ایسے اساتذہ کو سلام پیش کرتے ہیں ۔ ترقی کے جتنے بھی مینار کیوں نہ تعمیر کرلیں، تعلیم کو فروغ دےئے بغیر ترقی بے معنی ہوگی ۔ملک کو ترقی وخوشحالی کی راہ پر گامزن کرنے کیلئے نوجوان نسل کو جدید علوم سے آراستہ کرنا ہوگا۔محنت اورجذبے سے کام کیا جائے توکوئی رکاوٹ ترقی کی راہ میں حائل نہیں ہوسکتی۔دھرنوں نے ملک کا دھڑن تختہ کیا اب قوم کو نونہالوں کی کامیابی جیسی اچھی خبریں ملنی چاہئیں۔دھرنا دینے والے عناصر کو دھرنے چھوڑ کر قوم کے ٹیلنٹ کو آگے لانے کیلئے کام کرنا چاہیے۔دھرنے دینے والے عناصر اپنے صوبے میں تعلیم اورصحت کی سہولتوں کو بہتر بنائیں ۔دھرنوں کے ذریعے قوم کا وقت ضائع نہ کیا جائے کیونکہ یہ قوم پہلے ہی زخم خوردہ ہے ۔وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے ان خیالات کااظہار آج یہاں ماڈل ٹاؤن میں میٹرک کے امتحانات میں نمایاں پوزیشنیں حاصل کرنیوالے محنت کشوں کے بچوں کے اساتذہ کو انعامات دینے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔وزیراعلیٰ نے گورنمنٹ گرلزہائی سکول ہارون آباد کی ہیڈ ٹیچر شاہدہ سعید اورگورنمنٹ گرلز ہائی سکول شریف پورہ ملتان کی ٹیچر انیلہ مسعودکو ایک ،ایک لاکھ روپے کا چیک اورلیپ ٹاپ دےئے جبکہ میٹر ک کی پوزیشن ہولڈر طالبہ سمیعہ مجاہد کی حصول تعلیم میں معاونت کرنے والی اس کی بہن کیلئے بھی ایک لاکھ روپے کا اعلان کیا۔وزیراعلیٰ نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آج کی یہ تقریب میرے لئے بہت اہمیت کی حامل ہے کیونکہ اس تقریب میں وہ اساتذہ اکرام تشریف لائی ہیں جو ہم سب کیلئے قابل احترام ہیں ۔آج کی اس تقریب میں بہاولپور بورڈ میں تیسری پوزیشن حاصل کرنے والی اقرا بی بی اور ملتان بورڈ سے تیسری پوزیشن حاصل کرنے والی طالبہ سمیعہ مجاہد بھی موجود ہیں ۔اقرا بی بی کی والدہ وسائل کی کمی کے باعث اپنی بچی کے تعلیمی اخراجات پورا کرنے سے قاصر تھیں اللہ تعالی نے ان کی مدد کی اور درد دل رکھنے والی ہیڈمسٹریس شاہدہ سعید کے دل میں ان کیلئے رحم دلی کے جذبات ڈال دےئے اورانہوں نے اقرابی بی کو مالی لحاظ سے سپورٹ کیا۔اسی طرح سمیعہ مجاہد کے والد کپڑوں کی سلائی کے ذریعے روزگار کماتے ہیں اوریہ بچی بھی حصول تعلیم کیلئے مالی دشواریوں کا شکار تھی۔گورنمنٹ گرلز ہائی سکول شریف پورہ ملتان کی نیک دل خاتون ٹیچر نے سمیعہ مجاہد کی حوصلہ افزائی کی اوراسے اس مقام تک پہنچنے کیلئے مدد فراہم کی۔میں اپنی طرف سے اور حکومت پنجاب کی طرف سے شاہدہ سعید اورسمیعہ مجاہد کی ٹیچرانیلہ مسعود کا شکریہ ادا کرتا ہوں جنہوں نے اپنے فرض سے بڑھ کرحق ادا کیااوران بچیوں کو مالی دشواریوں سے بے نیاز ہوکرآگے بڑھنے کا راستہ دکھایا۔انہوں نے کہا کہ کم وسیلہ خاندانوں کی بچیوں کوتعلیم میں مددو رہنمائی فراہم کرنیوالی اساتذہ قوم کی ہیرو اورہمارے سروں کا تاج ہے۔ان اساتذہ کی بدولت ہی محدود وسائل رکھنے والی بچیوں کو اپنی تعلیم کا سلسلہ جاری رکھنے کا حوصلہ ملاہے۔

مزید : صفحہ اول