امجد صابری قتل کیس کا مرکزی ملزم گرفتار، تعلق سیاسی جماعت سے نکلا

امجد صابری قتل کیس کا مرکزی ملزم گرفتار، تعلق سیاسی جماعت سے نکلا

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) پولیس نے معروف قوال امجد صابری قتل کیس کے مرکزی ملزم کو گرفتار کر لیا۔ ملزم نے تفتیش کے دوران قتل کا اعتراف کر لیا اور تفتیشی ٹیم کو بتایاہے کہ وجہ قتل نہیں جانتا بس اوپر سے ملنے والے حکم کی تعمیل کی جاتی ہے۔ قوال امجد صابری کے قتل کا حکم فون پر ملا جس پر انہیں ٹارگٹ کلنگ کا نشانہ بنایا۔چینل 24 کے مطابق امجد صابری قتل کیس میں گرفتار ملزم عمران صدیقی کے ایم سی میں سرکاری ملازم ہے جس کا تعلق ایک سیاسی جماعت سے ہے۔ ملزم نے تفتیشی حکام کو بتایا کہ آخری گولی اس نے امجد صابری کے سر پر ماری جس سے اسے امجد کی موت کا یقین ہو گیا۔ ہمیں واردات انجام دینے کے لئے لیاقت آباد ڈاکخانے بلایا گیا تھا۔ واردات میں ملوث 3 ملزموں کو نہیں جانتا میں ڈاکخانے پر موجود ساتھی کے ہمراہ امجد صابری کے گھر کے قریب پہنچا۔ زیر حراست ملزم نے اپنے ساتھی کا نام بھی اگل دیا ہے۔ملزم نے بتایا کہ امجد صابری کو لیاقت آباد 10 نمبر پر قتل کرنے کا حکم ملا تھا جبکہ دو موٹرسائیکلوں پر 4 ملزمان سوار تھے۔

مزید : صفحہ اول