پاکستان کو مسئلہ کشمیر پر مضبوط موقف اختیار کرنا چایئے، مذہبی و سیاسی رہنماء

پاکستان کو مسئلہ کشمیر پر مضبوط موقف اختیار کرنا چایئے، مذہبی و سیاسی رہنماء

لاہور(جاوید اقبال،محمد نواز سنگرا)حکومت پاکستان کو مسئلہ کشمیر پر کمزور مؤقف نہیں دینا چاہیے،صرف بیانات اور یوم سیاہ کی بجائے معاملے کو تمام عالمی فورمز پر اٹھانا چاہیے۔کشمیر یوں کی آزادی نا گزیر ہے پاکستان کو مسئلہ کشمیر دنیاکے سامنے اٹھانا چاہیے اور اپنے سفارتخانے متحرک کرنا چاہیے۔مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے عالمی دوستوں کو ساتھ ملا کر آگے بڑھنے کی ضرورت ہے۔ان خیالات کا اظہار ملک کے سیاسی و مذہبی جماعتوں اور کشمیری رہنماؤں نے روز نامہ پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ہے۔ جماعت اسلامی کے رہنما لیاقت بلوچ نے کہا کہ کشمیریوں پر ظلم و ستم بند ہونا چاہیے اور پاکستانی حکومت کو محض بیانات سے نکل پر کشمیریوں کے ساتھ کھڑا ہونا چاہیے۔کشمیر کی آزادی کے لئے ایک تحریک چلانی چاہئے اور ذرابھی لچک برداشت نہیں کرنی چاہیے ۔پاکستان مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے بھارت کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر بات کرے۔مسلم لیگ(ن)کے رہنما شیخ روحیل اصغر نے کہا کہ حکومت کشمیر یوں کے ساتھ کھڑی ہے۔مسلم لیگ(ن)کی حکومت کشمیری بھائیوں کو مشکل وقت میں انہیں چھوڑ نہیں سکتی ،مسئلے کشمیر کے حل کیلئے عالمی برادری کو کردار ادا کرنا چاہیے۔پیپلز پارٹی کے سیکرٹری جنر ل لطیف کھوسہ نے کہا کہ حکمرانوں کے بھارت میں کاروبار ہیں جس وجہ سے کشمیر ایشوپر کھل کر بیان نہیں دیتی۔حکمران تجارت ختم کر کے کشمیری بھائیوں کا ساتھ دیں۔حکومت کا مؤقف انتہائی کمزور ہے جس سے کشمیریوں کو تکلیف ہوئی۔حکمران ڈنگ ٹپاؤ پالیسیوں پر کام کر رہی ہے۔تحریک انصاف کے رہنما اعجاز چوہدری نے کہا کہ یوم سیاہ سے کشمیریوں کی تسکین نہیں ہو سکتی ۔حکمران مسئلہ کشمیر کو عالمی فورم پر اٹھائے اور ہر وہ کام کیا جائے جس سے کشمیر کی آزادی جڑی ہو۔حکمران مبہم بیانات کی بجائے کھل کر میدان میں آئیں ۔پیپلز پارٹی کی رہنما ناہید خان نے کہا کہ کشمیری پاکستانیوں کے بھائی ہیں ان کا ناحق خون بہانا بھارتی مظالم کی زندہ مثال ہے۔کشمیریوں نے جانوں پر کھیل کر بھی پاکستان کا نعرہ نہیں چھوڑا اس لیے پاکستانی حکمرنوں کو بھی مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے سنجیدہ اقدامات اٹھانے کی ضرورت ہے۔مسلم لیگ(ق)کے رہنما کامل علی آغا نے کہا کہ کشمیر کے حوالے سے حکومت پاکستان کا مؤقف انتہائی کمزور ہے ۔مضبوط اقدامات اٹھانے کی ضرورت ہے جس سے بھارت کو مجبور کیا جا سکے۔ یوتھ فورم فار کشمیر کے سربراہ طارق احسان غوری نے کہا کہ حکمرانوں کو عالمی دوستوں کو ساتھ ملا کر مسئلہ کشمیر کو حل کرانے کیلئے سنجیدہ اقدامات اٹھانے کی ضرورت ہے۔کشمیر یوں کا ناحق خون بہنا بند ہونا چاہیے اور مسئلہ کشمیر حل ہونا چاہیے ۔کشمیریوں کا خون رنگ لائے گا اور وہ وقت دور نہیں جب کشمیر بھارتی مظالم سے آزاد ہو گا ۔

مزید : صفحہ آخر