دیربالا میں اربوں روپے کے ترقیاتی منصوبوں پر کام جاری ہے :عنایت اللہ

دیربالا میں اربوں روپے کے ترقیاتی منصوبوں پر کام جاری ہے :عنایت اللہ

پشاور( پاکستان نیوز)خیبر پختونخوا کے سینئر وزیر بلدیات و دیہی ترقی عنایت اﷲ نے کہا ہے کہ دیر بالا میں اربوں روپے کے ترقیاتی منصوبوں پر کام جاری ہے جس میں انجینئرنگ یونیورسٹی کیمپس کے علاوہ دو نئے کالجوں ، گیارہ سکولوں اور ہسپتالوں کا قیام شامل ہے اسی کے علاوہ سٹی کو ماڈل اور خوبصورت بنانے کے منصوبے پر بھی کام جاری ہے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے شینگاڑہ درہ برہ اول دیر میں ایک بڑے شمولیتی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ اس موقع پر نائب ناظم ویلج کونسل ، نائب ناظم ملک سلطان محمود نے پاکستان پیپلز پارٹی سے اپنا پچاس سالہ ناطہ توڑ کر جماعت اسلامیں اپنے خاندان اور سینکڑوں ساتھیوں کے ساتھ شامل ہونے کا اعلان کیا اس کے علاوہ ملک سید رازق ، ملک گل محمد ، حاجی فضل اﷲ ، امیر نیک محمد اور حاجی سعید اﷲ خان نے بھی جماعت اسلامی میں شمولیت کا اعلان کیا ۔ عنایت اﷲ نے کہا کہ صحت اور تعلیم کے علاوہ زراعت ، واٹر سپلائی اور آبپاشی اور سیاحت کے شعبوں میں بھی اربوں روپے کے ترقیاتی منصوبوں پر کام جاری ہے ۔ ان منصوبوں کی تکمیل سے دیربالا ایک ماڈل اور خوبصورت ضلع بن جائے گا ۔ انہو ں نے کہا کہ دیر بالا کے عوام نے جماعت اسلامی پر مکمل اعتماد کا اظہار کیا ہے اور عوام کی اعتماد کو کسی بھی صورت میں ٹھیس نہیں پہنچایا جائیگا ۔انہوں نے کہا آج کا دیر بالا ماضی کے مقابلے میں مکمل تبدیل ہو گیا ہے اور دیر کے عوام بہتری کے اس عمل پر کافی خوش ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت نے تین سالوں میں جتنے ترقیاتی کام کئے ہیں ، ماضی میں اس کی کوئی مثال نہیں ملتی ۔ انہو ں نے کہا کہ صوبائی حکومت نے اپنے حقیقت پسندانہ اقدامات کی وجہ سے غریب طبقوں کا عزت نفس بحال کیا ہے اور ان کی معیار زندگی بلند کرنے کے لئے تمام وسائل بروئے کا ر لا رہی ہے ۔ انہو ں نے کہا کہ صوبائی حکومت تمام شعبوں پر بھر پور انداز میں توجہ دے رہی ہے اور انشاء اﷲ وہ دن دور نہیں جب صوبے کے عوام خوشحال اور مطمئن ہوں گے

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر