بارہ سالہ بچی کو چلتی ٹرین میں ہوس کا نشانہ بنانے کی کوشش پر بی جے پی کا رکن اسمبلی گرفتار

بارہ سالہ بچی کو چلتی ٹرین میں ہوس کا نشانہ بنانے کی کوشش پر بی جے پی کا رکن ...
بارہ سالہ بچی کو چلتی ٹرین میں ہوس کا نشانہ بنانے کی کوشش پر بی جے پی کا رکن اسمبلی گرفتار

  

نئی دلی (مانیٹرنگ ڈیسک) انڈیا کی ریلوے پولیس نے ریاست بہار سے تعلق رکھنے والے رکن اسمبلی کو 12 سالہ بچی کو پربانچل ایکسپریس میں اپنی ہوس کا نشانہ بنانے کی کوشش کرنے پر گرفتار کرلیا ہے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق رکن اسمبلی کی شناخت تنا پانڈے کے نام سے ہوئی ہے جو ریاست بہار سے بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) سے تعلق رکھتے ہیں۔ افسوسناک واقعہ سامنے آنے کے بعد پارٹی نے تنا پانڈے کی بنیادی رکنیت منسوخ کردی ہے۔

پولیس رپورٹ کے مطابق تنا پانڈے نے کولکتہ سے گورکھ پور کے سفر کے دوران اپنے ہی کمپارٹمنٹ میں موجود تھائی نژاد بھارتی تاجر کی 12 سالہ بیٹی کو ہوس کا نشانہ بنانے کی کوشش کی ۔ پولیس رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ 12 سالہ لڑکی سورہی تھی اور اسی دوران درندہ صفت انسان نے اس پر حملہ کیا اور اسے اٹھا کر ریل گاڑی کے بیت الخلا میں لے جانے کی کوشش کی تاہم اسی دوران لڑکی جاگ گئی اور اس نے رونا شروع کردیا جس پر اردگرد موجود لوگ بھی جاگ گئے اور انہوں نے لڑکی کو ہوس پرست رکن اسمبلی کی گرفت سے آزاد کرایا ۔ پولیس نے بی جے پی کے رکن اسمبلی تنا پانڈے کو گرفتار کرکے اس کے خلاف بچوں کے تحفظ کے قانون اور زیادتی کے الزامات کے تحت مقدمہ درج کرلیا ہے۔

مزید : جرم و انصاف