28 سال بعد قومی پہلوان نے سلور میڈل جیت کرملک کا نام روشن کر دیا

28 سال بعد قومی پہلوان نے سلور میڈل جیت کرملک کا نام روشن کر دیا

لاہور(سپورٹس رپورٹر)ایشین کیڈٹ ریسلنگ چیمپیئن شپ 2017ء میں 28 سال بعد پاکستانی پہلوان عنایت اللہ نے سلور میڈل جیت کرملک کا نام روشن کر دیا ہے۔ تھائی لینڈ میں منعقد ہونے والی چیمپیئن شپ کے فائنل میں پاکستانی پہلوان عنایت کا کاغزستان کے پہلوان سے مقابلہ ہوا تھا سخت مقابلے کے باوجود پاکستانی پہلوان کو کامیابی نصیب نہ ہو سکی اور وہ سلور میڈل کے حقدار قرار پائے۔ 69 کلو گرام کلاس میں عنایت کا پہلا مقابلہ تاجکستان کے پہلوان سے ہوا جس میں کامیابی کے بعد سوسرے راونڈ میں ان کا مقابلہ ایرانی پہلوان سے ہوا جبکہ تیسرے میچ میں منگولیا کے پہلوان کو شکست دیکر فائنل کے لیے کوالیفائی کیا تھا۔ پاکستان ریسلنگ فیڈریشن کے چیئرمین سید عاقل شاہ اور سیکرٹری ارشد ستار نے پاکستانی پہلوان کی کامیابی پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے نوجوان کھلاڑیوں کو مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ ایشین کیڈٹ چیمپیئن شپ 2017ء4 میں پاکستان کے واحد پہلوان نے 69 کلو گرام میں شرکت کی تھی۔

ان کا کہنا تھا کہ مستقبل میں بھی پاکستانی پہلوان بین الاقوامی مقابلوں میں میڈل جیتیں گے۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی


loading...