ٹرمپ کیلئے کانگریس کا نیا بل رد کرنا مشکل ہو گا:جان تھیون،بین کارڈن

ٹرمپ کیلئے کانگریس کا نیا بل رد کرنا مشکل ہو گا:جان تھیون،بین کارڈن

واشنگٹن (اظہر زمان، بیوروچیف) سینیٹ میں ری پبلکن پارٹی کے اہم لیڈر جان تھیون اور سینیٹ فارن ریلیشینز کمیٹی کے ڈیمو کریٹک رکن بین کارڈن نے یقین ظاہر کیا ہے کہ روس، ایران اور شمالی کوریا پر پابندیوں کیلئے ری پبلکن اور ڈیمو کریٹک دونوں پارٹیوں کے اتفاق رائے سے جو نیا بل منظوری کیلئے تیار ہے، اسے رد کرنا صدر ٹرمپ کیلئے بہت مشکل ہوگا۔گزشتہ روزفوکس نیوز سنڈے کو انٹرویو دیتے ہوئے انکا مز ید کہنا تھا پابندیوں کا بل کانگریس کے دونوں ایوانوں کی مفاہمتی کمیٹی کے متفقہ مسودے کی تیاری کے بعد ایوان نمائندگان سے ہوتا ہوا سو موا ر یا منگل کو دوبارہ سینیٹ میں پیش ہوگا، دونوں ارکان نے توقع ظاہر کی ہے کہ یہ بل اتنی زیادہ اکثریت سے منظور ہوگا کہ اسے صدر کی طرف سے ویٹو کرنا مشکل ہوگا، اگر ویٹو ہو بھی گیا تو کانگریس کے پاس اس بل کیلئے اتنے ووٹ ہیں کہ وہ صدارتی ویٹو کو ختم کر دینگے ،پابند یو ں کے اس بل میں کچھ تاخیر اس لئے ہوئی ہے کہ شمالی کوریا اس میں شامل نہیں تھا اور ارکان کا خیال تھا اسے شامل کرنے سے دیر نہ ہو جائے لیکن پھر فیصلہ ہوا کہ اس بل میں شمالی کوریا کو بھی شامل کرلیا جائے۔ واشنگٹن کے حلقوں میں یہ تاثر ہے کہ شاید صدر ٹرمپ روس کیخلاف پابندیوں میں نرمی پیدا کرنا چاہتے ہیں لیکن کانگریس میں ان کی اپنی ری پبلکن پارٹی ان سے اتفاق نہیں رکھتی۔ اس دوران وائٹ ہاؤس کے ایک تر جما ن نے واضح کیا ہے کہ صدر ٹرمپ روس کیخلاف سخت پابندیوں کیلئے تیار ہیں، تاہم انہوں نے یہ نہیں بتایا کہ اس بل پر صدر دستخط کریں گے یا نہیں۔

جان تھیون

مزید : علاقائی


loading...