شریف برادران باقر نجفی کمیشن رپورٹ بدل سکتے ہیں: طاہر القادری

شریف برادران باقر نجفی کمیشن رپورٹ بدل سکتے ہیں: طاہر القادری

اسلام آباد( اے این این) سربراہ پاکستان عوامی تحریک ڈاکٹر طاہر القادری نے خدشہّ ظاہر کیا ہے کہ ٹمپرنگ کے ماہر شریف برادران باقر نجفی کمیشن رپورٹ بدل سکتے ہیں۔ انصاف کیلئے ماڈل ٹاؤن کمیشن رپورٹ کا اصلی حالت میں پبلک ہونا ناگزیر ہے،بالاخر وزیر اعظم نے اعترا ف کر لیا وہ کہیں اور بھی نوکری کرتے رہے۔ پاناما جے آئی ٹی رپورٹ بطور کیس سٹڈی کریمنالوجی نصاب میں شامل کی جائے ۔حکمران خا ند ا ن کی منی ٹریل سے کامیڈی ٹاک شوز کو شاندار مزاحیہ مواد ملا ۔ گزشتہ روز عوامی لائرز کے رہنماؤں اور اسلام آباد میں صدر شمالی پنجاب بریگیڈیر(ر)مشتاق احمد،قاضی شفیق،میر واعظ ترین،ابراررضا ایڈووکیٹ سے ٹیلی فون پر گفتگو میں انکا مزید کہنا تھا وقت آ گیا ہے کہ سانحہ ماڈل ٹاؤن کے ذمہ داروں کوعبرتناک سزائیں دی جائیں تاکہ آئندہ کوئی اقتدار کے نشے میں مست بد عنوان حکمران بیگناہوں کے قتل عام کی جرات نہ کر سکے۔ ہم شہدائے ماڈل ٹاؤن کے انصاف بشکل قصاص کیلئے تین سال سے قانونی جنگ لڑرہے ہیں ،اسکی ایف آئی آر کو داخل دفتر ہونے دیانہ ہونے دینگے ۔جسٹس باقر نجفی کمیشن کی رپورٹ شہدائے ماڈل ٹاؤن کے ورثاء کو انصاف دلوانے کے حوالے سے پہلی سیڑھی ہے ۔ پاکستان کا وزیر اعظم اپنے منصب پر رہتے ہوئے کسی اور ملک میں بھی نوکری کرتا رہا ۔معزز ججز اس اقبالی بیان کو کس نظر سے دیکھتے ہیں یہ انکا آئینی اور قانونی دائرہ اختیار ہے ۔

ڈاکٹر طاہر القادری

مزید : علاقائی


loading...