اپنے مسائل وکے حل کیلئے ، مسلمان بیرونی قوتوں اور اداروں کے سامنے ہاتھ پھیلانا چھوڑدیں : عبد الرحمان مکی

اپنے مسائل وکے حل کیلئے ، مسلمان بیرونی قوتوں اور اداروں کے سامنے ہاتھ ...

سیالکوٹ (اے این این)جماعۃ الدعوۃ شعبہ سیاسی امور کے سربراہ پروفیسر حافظ عبدالرحمان مکی نے کہا ہے کہ جنت ارضی کشمیر پر غاصب بھارت کا کوئی حق نہیں۔جہاں شہداء کا مقدس خون گرجائے وہ دھرتی کبھی غلام نہیں رہ سکتی۔ بھارت مسئلہ کشمیر خود اقوام متحدہ لیکر گیا لیکن اس کی قراردادوں پر آج تک عمل نہیں کیا۔ مسلمان اپنے مسائل کے حل کی خاطر بیرونی قوتوں اور اداروں کے سامنے ہاتھ پھیلانا چھوڑ دیں۔ ہمارے حکمران بھارتی ایماء پر حافظ محمد سعید کو نظربند کر کے ثابت کررہے ہیں کہ وہ مودی سرکار کی یاری میں اندھے ہو گئے ہیں۔حکمرانوں کی کمزور پالیسیوں سے فائدہ اٹھا کر بھارت سرکار سرحدی حدود کی خلاف ورزیاں کر رہی ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے علامہ اقبال چوک ریلوے روڈ پر منعقدہ شہداء کشمیر کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔کانفرنس سے ابو احمد، مولانا رمضان منظور،محمد آصف و دیگر نے بھی خطاب کیا۔کانفرنس میں شہر و گردونواح سے ہزاروں افراد نے شرکت کی۔اس موقع پر سیکورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے تھے۔شرکاء کو جامہ تلاشی کے بعد پنڈال میں جانے کی اجازت دی گئی۔شہداء کشمیر کانفرنس میں خواتین کے لئے الگ پنڈال بنایا گیا تھا ،خواتین نے بھی کانفرنس میں کثیر تعداد میں شرکت کی۔مقررین کے خطابات کے دوران زبردست جذباتی ماحول دیکھنے میں آیا،شرکاء کشمیریوں سے رشتہ کیا لاالہ الااللہ،کشمیر بنے گا پاکستان،حافظ محمد سعید کو رہا کرو،کشمیر کی آزادی تک جنگ رہے گی جنگ رہے گی و دیگر نعرے لگاتے رہے۔حافظ عبدالرحمان مکی نے کہا کہ ہندوستان پستی کی طرف جا رہا ہے اور پاکستان ترقی کی طرف جا رہا ہے ۔پاکستان کے سیاستدانوں سے کہتے ہیں کہ کشمیریوں کی تحریک کی کھل کر مدد وحمایت کریں۔برہان وانی کی شہادت بہت بڑی تحریک کی شکل اختیار کر گئی ہے۔ کشمیری شہداء کی قربانیاں تحریک آزادی کے ماتھے کا جھومر ہیں۔ کشمیریوں کے خون سے بے وفائی کے سبب موجودہ حکومت مشکلات سے دوچار ہے۔ نہتے کشمیریوں کیخلاف کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال پر خاموشی اختیا رکرنا درست نہیں۔ بین الاقوامی سطح پر انڈیا کی دہشت گردی اور ظلم و بربریت کو بے نقاب کیا جائے۔ بھارتی فوج روزانہ پاکستانی پرچم اٹھانے پر کشمیریوں کا خون بہا رہی ہے۔ آٹھ لاکھ بھارتی فوج نے کشمیر کو فوجی چھاؤنی میں تبدیل کر رکھا ہے۔

مکی

مزید : علاقائی


loading...