ٹریفک حادثات کا شکار معذور افراد معاوضہ حاصل کرنے کے بارے لا علم

ٹریفک حادثات کا شکار معذور افراد معاوضہ حاصل کرنے کے بارے لا علم

لاہور (خبر نگار) محکمہ ٹرانسپورٹ نے ٹریفک حادثات میں معذور یا جاں بحق مسافروں کیلئے معاوضہ مقرر کر رکھا ہے لیکن شہری اس سے یکسر لا علم ہیں، ٹریفک حادثے میں چہرہ مستقل بگڑ جانے کا معاوضہ پچاس ہزار، ایک دانت ٹوٹ جانے پر ساڑھے بارہ ہزار روپے، جان سے ہاتھ دھو بیٹھنے والے مسافروں کیلئے اڑھائی لاکھ روپے معاوضہ مقرر ہے۔محکمہ ٹرانسپورٹ پنجاب کے طے کردہ فارمولا کے مطابق ٹریفک حادثے میں جاں بحق مسافر کی جان کی قیمت اڑھائی لاکھ روپے ہے جبکہ بلوچستان میں مسافر کی حادثاتی موت کا معاوضہ چار لاکھ روپے ہے۔ موٹر وہیکل آرڈیننس کے مطابق ٹرانسپورٹر حادثے کی صورت میں جاں بحق مسافر کے اہلخانہ جبکہ معذور یا شدید زخمی ہونے والے مسافر کو زر تلافی کی صورت میں معاوضہ ادا کرے گا۔ کہنی سے اوپر ہاتھ ضائع ہونے کازر تلافی 65ہزار روپے، کہنی سے نیچے ہاتھ ضائع ہونے پر ٹرانسپورٹر مسافر کو50 ہزار روپے دینے کا پابند ہے۔ ٹخنے سے اوپر ٹانگ ضائع ہونے پر پینسٹھ ہزار، ٹخنے سے نیچے پاؤں کے ضیاع ہونے پر ساٹھ ہزار روپے زرتلافی مقرر ہے۔مسافر کے دونوں پاؤں ضائع ہونے کی صورت میں ایک لاکھ چالیس ہزار، قوت سماعت ضائع ہونے پر پینسٹھ ہزار، ایک آنکھ ضائع ہونے پر پچہتر جبکہ دونوں آنکھیں مکمل ضائع ہونے پر ٹرانسپورٹر ایک لاکھ چالیس ہزار روپے ادا کرنے کا پابند ہے۔ انگوٹھے کا معاوضہ چالیس ہزار، انگشت شہادت کا اڑتیس ہزار، پاؤں کی تمام انگلیاں ضائع ہوجانے کا معاوضہ پچاس ہزار روپے مقرر ہے۔محکمہ ٹرانسپورٹ نے زرتلافی کے قانون سے آگاہی کیلئے بھی خاطر خواہ اقدامات نہیں کیے۔

مزید : علاقائی


loading...