طارق خٹک اور اسحاق خٹک مفاد پرست سیاستدان ہیں‘ محمد الیاس

طارق خٹک اور اسحاق خٹک مفاد پرست سیاستدان ہیں‘ محمد الیاس

پبی (نما ئندہ پاکستان)طارق خٹک اور اسحاق خٹک نے پی پی پی سے اپنے مفادات پورے کر کے چلے گئے۔دوبارہ سینٹ میں پارٹی امیدوار کے بجائے سینٹ ووٹ کوبھاری معاوضے پر فروخت کیا۔پی پی پی چیئر مین بلاول بھٹو کا بے حد مشکور ہوں کہ انہوں نے پارٹی کارکنوں کی رائے کا احترام کرتے ہوئے حاجی اسحاق خٹک کو پی پی پی ضلع نوشہرہ کی صدارت دینے سے معذرت کی۔طارق خٹک نے پی پی پی میں دراڑیں پیدا کرنے کے لیے ہم خیال گروپ ،نظریاتی گروپ اور ناراض گروپ بنا رکھا تھا۔لیکن پی پی پی کے کارکنوں نے ان کے عزائم سے باخبر ہو کر تمام پارٹی لیڈر اور کارکن سب نے پی پی پی کے صوبائی صدر ہمایون خان کے قیادت پر بھر پور اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے ان کے عزائم نا کام بنا دیے ہیں اور ان کے ساتھ عوامی نیشنل پارٹی میں پارٹی کا کوئی بھی صوبائی، ضلعی ،تحصیل ،یونین کونسل اور ویلج کونسل کا کوئی بھی عہدیدار اور کارکن شامل نہیں ہوئے۔۔ان خیالات کا اظہار پاکستان پیپلز پارٹی تحصیل پبی کے صدر محمد الیاس نے پبی پریس کلب میں ایک پُر ہجوم پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا۔اس موقع پر پی پی پی ڈسٹرکٹ نوشہرہ کے نائب صدر الحاج محمد انور شیخ اور پارٹی کے بڑی تعداد میں کارکن بھی موجود تھے۔ پارٹی نے طارق خٹک کو پشاور ڈویژن اور ضلعی صدر بنایا تھا۔لیکن ان میں سیاسی نا اہلی ہونے کی وجہ سے ان کو نہیں سنبھال سکے۔ان کی سوچ ٹھیکوں میں کمیشن کے علاوہ سیاسی نہیں تھا۔این اے 5 میں بطور ممبر قومی اسمبلی پارٹی تنظیموں اور کارکنوں کا استحصال کیا۔خٹک نامہ اور پی کے 12 اور پی کے 13 کی گیس سکیموں کو اپنی مالی فائدے کے عوض پنجاب منتقل کیا۔وفاقی حکومت نے سینکڑوں نوکریاں دی تھی۔وہ نوکریاں بھی این اے 5 سے باہر علاقوں کو فراہم کی گئی۔این اے 5 میں پارٹی کارکنوں کو دیوار سے لگایا تھا۔ شہید بے نظیر بھٹو نے اپنی شہادت سے 15 دن پہلے پبی میں 12 دسمبر کو پی پی پی کے سابق صوبائی صدر سینیٹر سردار علی خان کی رہائش گاہ پرایک کھلے جلسہ عام میں ان سے حلف لیا تھا۔کہ ہم پارٹی سے غداری نہیں کریں گے۔ 20 جون 2017 کو انہوں نے خٹک باغ میں پی پی پی کے صوبائی صدر اور صوبائی کابینہ کے اعزاز میں افطار پارٹی دی تھی۔اور رمضان شریف میں دونوں بھائیوں نے قسم اٹھائی تھی۔کہ ہم پارٹی کے ساتھ وفادار رہے گے۔لیکن افسوس کہ شہید بے نظیر بھٹو اور صوبائی صدر کے ساتھ اٹھائے گئے حلف سے غداری کی۔گزشتہ 3 سال سے پی ٹی آئی،جمیعت علماء اسلام ، مسلم لیگ ن میں شمولیت کے لیے رابطے میں تھے۔لیکن کسی بھی پارٹی نے ان کو قبول نہیں کیا۔با خبر زرائع کے مطابق وزیر اعلی پرویز خٹک ،ڈاکٹر عمران خٹک،اکرم خان درانی اور امیر مقام سے کئی دفعہ خفیہ ملاقاتیں کی لیکن کسی نے بھی ان کو پارٹی میں لینے سے انکار کیا۔اور تمام پارٹی لیڈر کو بھاری معاوضے کی پیشکش کی لیکن کسی بھی پارٹی لیڈر نے ان کو قبول نہیں کیا ۔ عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی جنرل سیکرٹری میاں افتحار حسین ایک ایماندار اور پختوں مٹی کے لیے قربانی دینے والا انسان ہے۔ان کے ساتھ ایک سوچے سمجھے منصوبے کے تحت ایک بہت بڑی سازش کر کے دونوں کرپٹ بھائیوں کو ان کے ساتھ سٹیج پر بٹھا کر ان کی شخصیت اور علاقے میں ان کی مقبولیت کو ختم کرنے اور ان کو الیکشن میں ہرانے کی سازش کی جا رہی ہے۔عوامی نیشنل پارٹی کے کارکن میاں افتحار حسین کے خلاف اس سازش کوسمجھے اور دونوں بھائیوں کے خلاف اٹھ کھڑے ہو کر پارٹی میں ان کے خلاف آواز اٹھائے جسطرح تمام سیاسی اور مذہبی جماعتوں کے قائدین اورکارکنوں نے چمک کی لالچ کو مسترد کر کے ان کی شمولیت کے دروازے اپنی پارٹی پر بند کر دیے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...