نہال ہاشمی توہین عدالت کیس، اگرنشر کیا گیا مواد متن سے زیادہ نکلا تو نتائج بھگتنا ہونگے، سپریم کورٹ کے ریمارکس

نہال ہاشمی توہین عدالت کیس، اگرنشر کیا گیا مواد متن سے زیادہ نکلا تو نتائج ...
نہال ہاشمی توہین عدالت کیس، اگرنشر کیا گیا مواد متن سے زیادہ نکلا تو نتائج بھگتنا ہونگے، سپریم کورٹ کے ریمارکس

  


اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)مسلم لیگ ن کے سینیٹر نہال ہاشمی کیخلاف سپریم کورٹ میں توہین عدالت کیس کی سماعت ہوئی جس میں ڈی جی پیمرا بطور گواہ پیش ہوئے ،اس موقع پر ڈی جی پیمرا نے کہا 31مئی کو 28 ٹی وی چینلز نے نہال ہاشمی کی تقریر نشر کی اورکم وبیش ایک گھنٹے کی نشریات چیک کیں تقریر کی سی ڈیزسن کر متن پیش کیا ہے۔درخواست گزار کے وکیل نے سوال کیا۔کیا کبھی عمران خان کیخلاف کوئی نوٹس لیا گیا ؟اور کبھی کسی ٹی وی چینل کیخلاف کارروائی ہوئی ۔اس پر ڈی جی پیمرا نے کہا اگر ضابطے کی خلاف ورزی ہو تو خود ہی نوٹس لے لیتے ہیں ،اٹارنی جنرل کا کہنا تھا کسی چینل نے پوری تقریر نشر نہیں کی ،اس پر سپریم کورٹ نے پیمرا کا متن نامکمل قرار دیدیااور جسٹس عظمت سعید شیخ نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا سوشل میڈیا پر کیا چلا ہمیں اس سے کوئی سروکار نہیں ،اگر نشر کیا گیامواد متن سے زیادہ نکلا تو نتائج بھگتناہو گا۔اٹارنی جنرل اور ڈی جی پیمرا میں کوئی گھر نہیں جائے گا

مزید : اسلام آباد


loading...