سعودی عرب نے امریکہ کا تیل ’بند‘ کردیا کیونکہ۔۔۔

سعودی عرب نے امریکہ کا تیل ’بند‘ کردیا کیونکہ۔۔۔
سعودی عرب نے امریکہ کا تیل ’بند‘ کردیا کیونکہ۔۔۔

  


جدہ(مانیٹرنگ ڈیسک) تیل کی قیمتوں میں مسلسل کمی سے لاحق ہونے والے مالی بحران سے پریشان سعودی عرب کسی بھی صورت تیل کی پیداوار کم کرنے کا خواہاں تھا اور بالآخر اس کی یہ خواہش پوری ہوتی دکھائی دے رہی ہے۔ خود سعودی عرب نے بھی تیل کی برآمد میں نمایاں کمی کر دی ہے جس کا اندازہ گزشتہ ہفتے امریکی انرجی انفارمیشن ایڈمنسٹریشن کی طرف سے جاری اعدادوشمار سے لگایا جا سکتا ہے۔ بلومبرگ کی رپورٹ کے مطابق ان اعدادوشمار سے ظاہر ہوتا ہے کہ سعودی عرب نے امریکہ کو تیل کی فراہمی بہت کم کر دی ہے اور اس وقت وہ امریکہ کو گزشتہ 7سال کی نسبت کم ترین تیل دے رہا ہے۔

قطر،چار عرب ممالک کے بائیکاٹ کوختم کرنے کے لئے تیار ،خود مختاری پر کوئی بھی سمجھوتہ نہیں ہو گا: امیر شیخ تمیم بن حماد ال ثانی

رپورٹ کے مطابق رواں سال مارچ تک امریکہ سعودی عرب سے روزانہ 15 لاکھ بیرل سے زائد تیل لے رہا تھا جس میں جولائی کے مہینے سے کمی واقع ہونی شروع ہو گئی اور 14جولائی سے شروع ہونے والے ہفتے میں یہ شرح صرف 5لاکھ 24ہزار بیرل روزانہ کی سطح پر آ گئی ہے۔ایڈمنسٹریشن کے ڈیٹا کے مطابق گزشتہ 6ہفتوں میں رواں سال کے پہلے 6ہفتوں کی نسبت سعودی عرب سے امریکہ کو تیل کی فراہمی میں 34فیصد کمی واقع ہوئی ہے۔سعودی وزیرتیل خالد الفلیح کا کہنا ہے کہ ”یہ بہت ناگزیر ہو چکا ہے کیونکہ امریکہ کے تیل کے ذخائر کو خشک کرنے میں ناکامی کی وجہ سے ہی تیل کی قیمتوں میں مسلسل کمی پر قابو نہیں پایا جا سکا۔ اب امریکہ کو تیل کی فراہمی میں خاطرخواہ کمی لائی جائے گی۔“

مزید : عرب دنیا


loading...