پاکستانی کی مراکشی لڑکی سے منگنی اور پھر اس سے ایسی شرمناک ترین بات کہہ دی کہ لڑکی نے کبھی سوچا بھی نہ ہوگا، شادی ہال کی بجائے پاکستانی کو جیل پہنچادیا گیا

پاکستانی کی مراکشی لڑکی سے منگنی اور پھر اس سے ایسی شرمناک ترین بات کہہ دی کہ ...
پاکستانی کی مراکشی لڑکی سے منگنی اور پھر اس سے ایسی شرمناک ترین بات کہہ دی کہ لڑکی نے کبھی سوچا بھی نہ ہوگا، شادی ہال کی بجائے پاکستانی کو جیل پہنچادیا گیا

  


ابوظہبی (مانیٹرنگ ڈیسک) عزت کی خاطر تو انسان جان بھی دے دیتا ہے لیکن افسوس کہ کچھ لوگ ایسے بھی ہوتے ہیں جو اپنے ہاتھوں اپنی ہی عزت کا جنازہ نکال دینے میں کوئی حرج محسوس نہیں کرتے۔ ابو ظہبی میں مقیم ایک پاکستانی نوجوان نے بھی ایک ایسی ہی شرمناک مثال قائم کر دی ہے، جس نے شادی سے انکار پر اپنی منگیتر کی قابل ِ اعتراض تصاویر سوشل میڈیا پر پوسٹ کرنے کی دھمکی دے ڈالی۔

خلیج ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق اس نوجوان کی ملاقات پانچ سال قبل فیس بک کے ذریعے ایک مراکشی لڑکی کے ساتھ ہوئی تھی۔ دونوں کے درمیان بات چیت کا سلسلہ جلد دوستی میں بدل گیا اور بعدازاں ان کی منگنی بھی ہو گئی۔ رپورٹ کے مطابق اس وقت لڑکی مراکش میں ہی مقیم تھی لیکن پاکستانی نوجوان بعد ازاں اسے متحدہ عرب امارات لے آیا۔

ملک میں کسی بھی لڑکی کی شادی نہیں ہو گی جب تک وہ۔۔۔‘ سعودی حکومت نے واضح اعلان کر دیا، ایسا قانون آگیا کہ ہر کوئی تعریف کرنے پر مجبور ہو گیا

لڑکی کچھ عرصے تک اپنے رشتوں کے ہاں مقیم رہی لیکن بعدازاں جب شادی کی بات چل رہی تھی تو بوجوہ اس نے انکار کر دیا۔ لڑکی کے انکار کرنے پر پاکستانی نوجوان نے اسے خطرناک نتائج کی دھمکیاں دیں اور خصوصاً اس کی قابل اعتراض تصاویر سوشل میڈیا پر پوسٹ کرنے کی دھمکی دی۔ ان دھمکیوں کے نتیجے میں لڑکی شکایت لے کر پولیس کے پاس پہنچ گئی، جس پر پاکستانی نوجوان کو گرفتار کر لیا گیا ۔

عدالت نے پاکستانی نوجوان کو تو چار سال قید کی سزا سنائی ہی ہے لیکن ساتھ ہی اس کی شکایت لے کر پولیس کے پاس جانے والی مراکشی لڑکی بھی سزا ہو گئی ہے۔ پاکستانی نوجوان اور مراکشی لڑکی دونوں کو آرائشِ گناہ کے جرم میں ایک سال قید کی سزا سنائی گئی ہے کیونکہ دونوں شادی کے بغیر اکٹھے رہنے کے جرم کے مرتکب ہوئے تھے۔ یوں پاکستانی نوجوان کو مجموعی طور پر پانچ سال قید کی سزا ہوئی ہے۔

مزید : عرب دنیا


loading...