سندھ اسمبلی اجلاس،نیب آرڈینس2000بل دوبارہ منظور

سندھ اسمبلی اجلاس،نیب آرڈینس2000بل دوبارہ منظور
سندھ اسمبلی اجلاس،نیب آرڈینس2000بل دوبارہ منظور

  


کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن)سندھ اسمبلی کے اجلاس میں آج نیب آرڈینس بل اپوزیشن کے احتجاج باوجود بھی دوسری بار منظور،نیب آرڈینس بل2000مشرف دور میں بنا تھا،جس میں سرکاری ملازم کو فوری طور پر برخاست کیا جا سکتا ہے۔اپوزیشن نے بل کی مخالفت کرتے ہوئے کہا کہ انہیں اس کی مخالفت میں بات کرنے کا موقع دیا جائے۔

تفصیلات کے مطابق پیر کو اسمبلی اجلاس میں نیب آرڈیننس منسوخ کرنے کی منظوری کے بعد اور نئے مجوزہ ایکٹ کے نافذ العمل ہوتے ہی نیب آرڈی ننس ختم اور زیرسماعت سارے مقدمات اینٹی کرپشن کورٹس کو منتقل ہو جائیں گے اور نیب صوبائی اداروں کیخلاف کوئی کارروائی نہیں کر سکے گا۔ دوسری جانب قانونی ماہرین اورعوامی حلقے اسے سندھ حکومت کی اپنی کرپشن چھپانے کی کوشش کے مترادف قرار دے رہے ہیں۔

مانچسٹر ائرپورٹ پر پاکستان سے ایک ایسے شخص کی آمد جسے دیکھتے ہی سارے پاکستانی واقعی اس کے قدموں میں گر گئے، ویڈیو نے سوشل میڈیا پر ہنگامہ برپا کردیا

پیپلزپارٹی کے کئی وزیروں کیخلاف نیب میں انکوائریاں چل رہی ہیں عوامی حلقوں کا کہنا ہے کہ اس اقدام سے انہی سیاست دانوں کو براہ راست فائدہ پہنچانا مقصود ہے اورسندھ حکومت کی جانب سے نئے احتساب ادارے کے قیام کے فیصلے سے وفاق اور سندھ حکومت میں تصادم اورنئی محاذآرائی شروع ہونے کا امکان ہے جبکہ آئی جی سندھ کے معاملہ پر پہلے ہی فریقین کے تعلقات میں کشیدگی اور بدمزگی موجود ہے اور صوبائی حکومت صوبائی پولیس چیف کوبے اثرکرنے کے لیے مختلف قوانین اورحیلے بہانے اختیارکرنے میں مصروف ہے۔

مزید : کراچی


loading...