نوجوان جوڑے کو پولیس والوں نے رنگے ہاتھوں پکڑلیا اور پھر پولیس سٹیشن تک برہنہ حالت میں چلنے پر مجبور کردیا کیونکہ۔۔۔

نوجوان جوڑے کو پولیس والوں نے رنگے ہاتھوں پکڑلیا اور پھر پولیس سٹیشن تک ...
نوجوان جوڑے کو پولیس والوں نے رنگے ہاتھوں پکڑلیا اور پھر پولیس سٹیشن تک برہنہ حالت میں چلنے پر مجبور کردیا کیونکہ۔۔۔

  


بنکاک (نیوز ڈیسک) تھائی لینڈ کی سیر کو جانے والے ایک برطانوی جوڑے نے ایک مشہور تفریحی ساحل پر اس وقت کھلبلی مچادی جب وہ سینکڑوں لوگوں کے سامنے ہی بے حیائی میں مشغول ہوگئے، تاہم انہیں بھی یہ حرکت بہت مہنگی پڑی۔

میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق برطانوی جوڑے کو سرعام بے حیائی کرتے دیکھ کر وہاں موجود دیگر سیاح اور مقامی افراد مشتعل ہوگئے اور انہیں گھیرلیا، جس کے بعد لوگوں نے فوری طور پر پولیس کو اطلاع کردی۔ پولیس کو بتایا گیا کہ یہ جوڑا نشے میں دھت تھا اور کسی کے کہنے اور روکنے سے اپنی بے حیائی سے باز نہیں آرہا تھا۔

17 سالہ نوجوان لڑکی نے اپنے ہی والدکو ایسا شرمناک کام کرتے رنگے ہاتھوں پکڑلیا کہ جان کر ہی انسان شرما جائے

جب پولیس پہنچی تو اوباش مرد نے گرفتاری سے بچنے کیلئے سمندر کی جانب دوڑ لگادی تاہم اسے پکڑلیا گیا۔ اسی دوران خاتون غصے سے چلاتی رہی اور بار بار کہتی رہی ”ہم کہیں نہیں جارہے۔ ہم پولیس کے ساتھ نہیں جائیں گے۔ ہم اُدھر کو (سمندر کی جانب) جائیں گے۔“

بالآخر پولس دونوں کو برہنہ حالت میں ہی ساحل سمندر سے پیدل مارچ کرواتے ہوئے اپنے ساتھ لے گئی۔ رپورٹ کے مطابق پولیس سٹیشن پہنچنے تک دونوں کے حواس قدرے بحال ہوچکے تھے لہٰذا انہوں نے معافی مانگی اور اپنے رویے پر شرمندگی کا اظہار کیا۔ سرعام بے حیائی کا مظاہرہ کرنے پر دونوں کو 1000 تھائی بھات (تقریباً 3000 پاکستانی روپے) کا جرمانہ کیاگیا جس کے بعد انہیں جانے کی اجازت دے دی گئی۔

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...