چیئرمین ایس ای سی پی ظفر حجازی کو عہدے سے ہٹانے کے لئے دائر درخواست پر وفاقی حکومت کو نوٹس جار ی

چیئرمین ایس ای سی پی ظفر حجازی کو عہدے سے ہٹانے کے لئے دائر درخواست پر وفاقی ...
چیئرمین ایس ای سی پی ظفر حجازی کو عہدے سے ہٹانے کے لئے دائر درخواست پر وفاقی حکومت کو نوٹس جار ی

  


لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائیکورٹ نے ریکارڈ ٹمپرنگ کیس میں ملوث چیئرمین ایس ای سی پی ظفر حجازی کو عہدے سے ہٹانے کے لئے دائر درخواست پر وفاقی حکومت کو نوٹس جار ی کرتے ہوئے جواب طلب کر لیاہے۔

شہرقائد میں موٹرسائیکل سواردہشتگردوں کی پولیس پر فائرنگ ،ہیڈ کانسٹیبل شہید ،اہلکارزخمی

جسٹس شمس محمود مرزا نے یہ نوٹس مقامی شہری ظہور علی کی درخواست پر جاری کیا ۔درخواست گزار کی وکیل صبا سعید نے موقف اختیار کیاکہ ظفر حجازی نے شریف خاندان کو بچانے کے لئے ریکارڈ ٹمپر کیا۔ایس ای سی پی کا سرکاری عہدہ ذاتی مفادات اور حکمرانوں سے تعلقات کو بڑھانے کے لئے استعمال کیا جانا غیر قانونی اقدام ہے۔سپریم کورٹ کے حکم پر ایف آئی اے نے ریکارڈ ٹمپرنگ پر ظفر حجازی کے خلاف مقدمہ بھی درج کیا۔وہ گرفتار بھی ہوچکے ہیں ۔چیئرمین ایس ای سی پی ظفر حجازی نے ٹمپرنگ کر کے اختیارات کا غلط استعمال کیا ،اختیارات کے غلط استعمال پر ظفر حجازی چیئرمین ایس ای سی پی کے عہدے کے اہل نہیں رہے۔انہوں نے استدعا کی کہ چیئرمین ایس ای سی پی ظفر حجازی کو عہدے سے ہٹایا جائے جس پر عدالت نے وفاقی حکومت کو نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب طلب کر لیاہے۔

مزید : لاہور


loading...