فیروزپورروڈدھماکا،پولیس کوسیف سٹی کیمروں کی فوٹیج میسرنہ آسکی

فیروزپورروڈدھماکا،پولیس کوسیف سٹی کیمروں کی فوٹیج میسرنہ آسکی
فیروزپورروڈدھماکا،پولیس کوسیف سٹی کیمروں کی فوٹیج میسرنہ آسکی

  


لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)فیروز پور روڈ پر خودکش دھماکے نے سیف سٹی پراجیکٹ پر سوالیہ نشانہ کھڑا کر دیا ، جائے دھماکہ کے پاس لگے پول پر کیمرے موجود نہ ہونے کے باعث کیمروں کی فوٹیج میسر نہ ہو سکی ، 12ارب کا منصوبہ 2016 میں مکمل ہوناکی بجائے 2017کے وسط میں بھی تکمیل کو نا پہنچ سکا ہے۔

تفصیل کے مطابق لاہور کے معروف شاہراہ فیروز پر روڈ کے قریبی سبزی منڈی کے باہر ہونے والے دھماکے کے نتیجے میں 26قیمتیں انسانی جانوں کا ضیائع ہواجبکہ بیشتر زخمی ہو چکے ہیں ۔ لاہور میں ہونے والے دھماکے نے سیف سٹی پراجیکٹ پر سوالیہ نشان کھڑا کر دیا ہے ۔ سیف سٹی کے ایم ڈی کے مطابق پروجیکٹ کی لاگت 12ارب سے زائدتھی اور لاہورمیں 8ہزارکیمرے نصب کرنے ہیں لیکن تاحال صرف 1500کیمرے نصب کیے جاسکے ہیں۔ نجی ٹی وی دنیا نیوز کے ذرائع کے مطابق دھماکے سے چندفٹ دورلگے پول پرکیمرے نہیں لگائے گئے تھے جس کے باعث حملہ آور کی تصویر اور حرکات و سکنات کا پتہ نہیں لگایا جا سکا ہے ۔

مزید : لاہور


loading...