اگر رات کو سوتے ہوئے آپ بستر کے سائیڈ پر ایک مرغی رکھ دیں تو اس سنگین ترین بیماری سے محفوظ رہ سکتے ہیں

اگر رات کو سوتے ہوئے آپ بستر کے سائیڈ پر ایک مرغی رکھ دیں تو اس سنگین ترین ...
اگر رات کو سوتے ہوئے آپ بستر کے سائیڈ پر ایک مرغی رکھ دیں تو اس سنگین ترین بیماری سے محفوظ رہ سکتے ہیں

  


نیویارک(نیوزڈیسک) اگر آپ مچھر کے کاٹنے اور ملیریا سے بچنا چاہتے ہیں تو رات کو سوتے ہوئے اپنے پاس مرغی کو بھی رکھ لیں کیونکہ ایک تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ ملیریاپھیلانے والا مچھر اس جگہ جاتا بھی نہیں جہاں مرغیاںموجود ہوں۔

تفصیلات کے مطابق مچھر کچھ پرندوں اور جانوروں کے پاس جانے سے گھبراتا ہے اور ان پرندوں میں مرغی بھی شامل ہے۔مرغیوں سے کچھ ایسی بدبو نکلتی ہے جن سے مچھروں کوبہت مشکل درپیش آتی ہے اور وہ اس جگہ جانے کی کوشش بھی نہیں کرتا۔ افریقہ کے ملک ایتھوپیا میں کی جانے والی تحقیق میں سائنسدانوں نے دیکھا کہ مچھر انسانوں کے علاوہ جانور جیسے بکری،گائے اور بھیڑوں کو کاٹتا ہے لیکن مرغیوں سے یہ کوسوں دور بھاگتا ہے۔ ماہرین کا کہناہے کہ مچھروں کو زندہ رہنے کے لئے خون چوسنا پڑتا ہے اوراگرانسان کا خون میسر نہ ہوتو جانوروں پر گزارا کیا جاتا ہے تاہم مچھر مرغیوں کے قریب بھی نہیں جاتا اور اس کی وجہ مرغیوں سے آنے والی بدبو ہے جو مچھروں کو ناگوار گزارتی ہے۔تجربے کے طور پر سائنسدانوں نے 11گھروں میں11افراد کو رکھا جن کی عمریں 27اور36سال کے درمیان تھیںاور ساتھ ہی مچھروں والا جال بھی لگادیا گیا۔کچھ جگہوں پر مرغیوں کے پر رکھ دئیے گئے۔کچھ دن بعد جب ان جالوں کو دیکھا گیا تو معلوم ہوا کہ جہاں مرغیوں کے پر تھے وہاں مچھروں کی تعداد انتہائی کم تھی جبکہ بغیر مرغیوں کے پَروں والی جگہ مچھروں کی تعداد بہت زیادہ تھی۔

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...