نیلم جہلم سرچارج کی وصولی کا اب کوئی جواز نہیں

نیلم جہلم سرچارج کی وصولی کا اب کوئی جواز نہیں

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


بجلی کے بلوں میں صارفین سے ”نیلم جہلم سرچارج“ طویل عرصے سے اب تک وصول کیا جا رہا ہے، جبکہ یہ پاور پراجیکٹ کئی ماہ پہلے مکمل ہو گیا تھا اور اب پیداوار بھی دے رہا ہے،اِس لئے یہ سرچارج فوری طور پر ختم کرنے کی ضرورت تھی،لیکن حکومت نے اب تک اس جانب توجہ نہیں دی،ایک سرچارج جس مقصد کے لئے لگایا گیا تھا،جب وہ پورا ہو گیا تو اب اسے جاری رکھنے کا کوئی جواز نہیں اور اسے بے انصافی بلکہ ظلم ہی تصور کیا جائے گا کیونکہ پراجیکٹ تو مکمل ہو گیا،لیکن لوگوں سے اس کے نام پر ”جرمانہ“ اب بھی وصول کیا جا رہا ہے۔ مختلف حکومتیں اس مد میں صارفین سے چھ ارب روپے سے زائد رقم وصول کر چکی ہیں،اس پراجیکٹ کی تعمیر میں غیر معمولی تاخیر کی وجہ سے لاگت میں برابر اضافہ ہوتا رہا،اب اگر یہ پراجیکٹ مکمل ہو چکا ہے تو پھر سرچارج کی وصولی کی وجہ سمجھ میں نہیں آتی،لوگ پہلے ہی مہنگی بجلی خرید رہے ہیں،موجودہ حکومت آنے کے بعد کم از کم تین بار بجلی کی قیمتوں میں اضافہ ہو چکا ہے اور ابھی چند روز قبل کہا گیا ہے کہ قیمتیں مزید بڑھیں گی،اِن حالات میں تو ہر قسم کے سرچارج ختم کرنے کی ضرورت ہے تاکہ مہنگی بجلی خریدنے والوں کو کسی جانب سے کوئی ریلیف تو ملے،اِس لئے فوری طور پر یہ سرچارج ختم کیا جائے۔

مزید :

رائے -اداریہ -