کراچی جیل سے فرار ہونیوالا دہشتگرد شیخ ممتاز عرف فرعون ساتھیوں سمیت مارا گیا

  کراچی جیل سے فرار ہونیوالا دہشتگرد شیخ ممتاز عرف فرعون ساتھیوں سمیت مارا ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

کراچی، کوءٹہ(;200;ن لائن) سنٹرل جیل کراچی سے فرار ہونے والا مبینہ دہشت گرد شیخ ممتاز عرف فرعون کوءٹہ میں قانون نافذ کرنے والے اداروں کے مشترکہ آپریشن میں مارا گیا ہے ۔ ذراءع کے مطابق دہشت گرد شیخ ممتاز دیگر ساتھیوں کے(بقیہ نمبر56صفحہ12پر )

ہمراہ سنٹرل جیل توڑ کر فرار ہوگیا تھا ۔ قانون نافذ کرنے والے اداروں کے مشترکہ آپریشن میں دہشت گرد کے دیگر ساتھیوں کے مارے جانے کی بھی اطلاع ہے ۔ مشترکہ ;200;پریشن میں ہلاک ہونے والا دہشت گرد کراچی میں پولیس اہلکاروں کی ٹارگٹ کلنگ جیل توڑنے اور سنگین نوعیت کے جرائم میں پولیس کو مطلوب تھا ۔ ہلاک دہشت گرد کی گرفتاری کے لئے سی ٹی ڈی کی طرف سے مختلف علاقوں میں کاروائیاں جاری تھیں ۔ واضح رہے کہ ستمبر 2017 میں مقامی ذراءع ابلاغ میں خبر ;200;ئی تھی کہ سنٹرل جیل کراچی سے فرار ہونے والے خطرناک دہشت گرد افغانستان پہنچ گئے ہیں ۔ ذراءع کے مطابق لشکر جھنگوی سے تعلق رکھنے والے دہشت گرد شیخ ممتاز عرف فرعون اور محمد احمد عرف منا 13 جون کو کراچی سنٹرل جیل سے فرار ہوئے تھے جو اب افغانستان پہنچ چکے ہیں ۔ ملزم شیخ محمد عرف فرعون اور احمد خان عرف منا کو 2013 میں سی ٹی ڈی نے گرفتار کیا تھا، ملزمان 33 سنگین مقدمات میں ملوث ہیں اور ان پر 40 افراد کو قتل کرنے کا الزام ہے جن میں زیادہ تر پولیس اہلکار شامل ہیں ۔ ملزم احمد منا کو ایک کیس میں 10 سال قید کی سزا بھی ہوچکی تھی ۔ قیدیوں کے فرار ہونے کے معاملے پرسپرنٹنڈنٹ اورڈپٹی جیل سپرنٹنڈنٹ سمیت 12اہلکاروں کو گرفتار کرکے مقدمہ قائم کیا گیا تھا ۔ ذراءع نے بتایا کہ سی ٹی ڈی اور دیگراداروں کی جانب سے اس حوالے سے رپورٹ محکمہ داخلہ میں جمع کرائی گئی ہے جس میں بتایا گیا ہے کہ دونوں دہشت گرد سنٹرل جیل سے فرار ہونے کے بعد فوری طور پر بلوچستان گئے اور وہاں سے چمن کے راستے افغانستان فرار ہوگئے ۔

دہشتگردشیخ ممتاز