چیئرمین اورڈپٹی چیئرمین سینیٹ کےخلاف تحریک عدم اعتماد کا معاملہ، حکومت کا ایک بار پھر اپوزیشن سے رابطہ کرنے کا فیصلہ

چیئرمین اورڈپٹی چیئرمین سینیٹ کےخلاف تحریک عدم اعتماد کا معاملہ، حکومت کا ...
چیئرمین اورڈپٹی چیئرمین سینیٹ کےخلاف تحریک عدم اعتماد کا معاملہ، حکومت کا ایک بار پھر اپوزیشن سے رابطہ کرنے کا فیصلہ

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)چیئرمین سینیٹ اورڈپٹی چیئرمین سینیٹ کےخلاف تحریک عدم اعتماد کے معاملے پر حکومت نے ایک بار پھر اپوزیشن سے رابطہ کرنے کافیصلہ کیا ہے،حکومت اور اپوزیشن میں بیک ڈور رابطے جاری ہیں ،حکومت کی جانب سے اپوزیشن کی اعلیٰ قیادت سے ملاقاتوں کا امکان ہے ،گزشتہ روزباہمی مشاورت کے باعث ریکوزیشن اجلاس انتہائی مختصرہوا،حکومت نے اپوزیشن سے ریکوزیشن واپس لینے کی درخواست کی تاہم اپوزیشن نے معذرت کرلی ،ذرائع کا کہنا ہے کہ شبلی فرازبلاول بھٹو سمیت دیگر سیاست دانوں سے جلد رابطہ کریں گے،پی ٹی آئی کے سینٹر شبلی فراز نے کہا ہے کہ تحریک عدم اعتماد کی بھرپورطریقے سے تیاری کررہے ہیں،اپوزیشن کے ارکان سے بھی رابطے کررہے ہیں،راجہ ظفرالحق سے لےکرآخری رکن تک رابطے کررہے ہیں،شبلی فرازنے کہا کہ الیکشن کے بعد ایوان کا ماحول کیا ہوگا ؟ اس کا کتنا منفی اثرپڑے گا،انہوں نے کہا کہ پارٹی خواہش ہے کہ اپوزیشن کوووٹنگ میں نہ جانے دیں ،یہ الیکشن ایوان کے مستقبل وقار کےلئے اچھا نہیں،شبلی فراز کا کہناتھا کہ الیکشن میں جوبھی جیتے اس سے ایوان کا ماحول خراب ہوگا،اگرکوشش رنگ نہیں لاتی توپھرالیکشن توہونا ہے،الیکشن کی بھی تیاری کررہے ہیں،صحافی کے سوال ”شہبازشریف ، بلاول بھٹواور اسفندیارولی سے ملاقات کریں گے؟“کے جواب میں شبلی فراز نے کہا کہ اپنی سطح پرضرورملاقات کروں گا،مجھے کوئی اعتراض نہیں۔