چیئرمین سینٹ کیخلاف قرارداد،حکومتی وفد اور مولانا فضل الرحمان کے درمیان ملاقات ختم

چیئرمین سینٹ کیخلاف قرارداد،حکومتی وفد اور مولانا فضل الرحمان کے درمیان ...
چیئرمین سینٹ کیخلاف قرارداد،حکومتی وفد اور مولانا فضل الرحمان کے درمیان ملاقات ختم

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیر اعلیٰ بلوچستان جام کمال اور مولانا فضل الرحمان کے درمیان چیئرمین سینٹ کیخلاف تحریک اعتماد کے معاملے پر ملاقات ختم ہو گئی۔تحریک انصاف کے سینٹر شبلی فراز نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ کوشش کریں کہ سینیٹ کاوقارمتاثر نہ ہو،مولانا فضل الرحمان کی جماعت کی بلوچستان میں نمائندگی ہے،ہم نے اپنے خیالات مولانا صاحب کے سامنے پیش کئے،سینیٹ کے وقارکوبچایاجائے اوراس میں ساری پارٹیوں کوحصہ ڈالناچاہئے جبکہ وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال نے کہا کہ مولانا فضل الرحمان کے سامنے اپنی درخواست رکھی ہے،لگ رہا ہے کہ شاید اپوزیشن کے اقدام سے کچھ ایسے نتائج نکلیں جو اچھے نہ ہوں، سینیٹ کی ڈیڑھ سالہ مدت گزرچکی،ہم چاہتے ہیں کوئی ایسااقدام ہوجس سے سینیٹ کاوقاربرقرار رہے،جام کمال کا کہناتھا کہ مجموعی طور پر ایک ایسا فیصلہ کیاجائے جو بہتری کی طرف لے جائے ، کوشش کریں گے کہ چیزوں کو بہتر انداز میں آگے لے جائیں،مولانا فضل الرحمان نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ شبلی فراز،جام کمال اور ان کے ساتھیوں کو اپنے گھر میں خوش آمدید کہا،ان کا کہناتھا کہ اس مرحلے پر انکی خواہش پوری کرنا کیسے ممکن ہوگا کہ سینیٹ سے متعلق فیصلہ متحدہ اپوزیشن نے کیا۔