تشدد‘بوگس مقدمہ میں ملوث کرنے پر5اہلکاروں کیخلاف انکوائری کا حکم

تشدد‘بوگس مقدمہ میں ملوث کرنے پر5اہلکاروں کیخلاف انکوائری کا حکم

  

لاہور(خبرنگار)سی سی پی او لاہورکو چونگی امرسدھو بندیاں والا پل کے رہائشی سابق جنرل کونسلر ملک نذیر احمد نے شکایت کی کہ اس کے محلے میں بچوں کی لڑائی ہوئی جس میں وہ چھوڑانے کیلئے گھر سے نکلا کہ چوکی پنجاب سوسائٹی میں تعینات محافظ پولیس اہلکاروں نے لڑائی جھگڑا کرنے والوں کے ساتھ اسے بھی پکڑ لیا اور تشدد کا نشانہ بناتے ہوئے چوکی پنجاب سوسائٹی لے گئے تین روز تک چوکی میں قید میں رکھ کرتشدد کرتا رہا اور بعد میں فائرنگ کے مقدمہ میں ملزم کا ساتھی ظاہر کر کے بوگس طریقہ سے اس کے بیٹے اورداماد اسے سمیت ملوث کردیا آخر کار پانچ روز عدالت کے حکم پر رہائی ملی۔ایس ایس پی ڈسپلن لاہورعبادت نثار نے پاکستان کو بتایا کہ چوکی انچارج پنجاب سوسائٹی ٹی دانیال گجر اور اہلکاروں جمیل اورانوعلی وغیرہ کے خلاف انکوائری شروع کردی گئی ہے اور آج طلب کر لیا گیا ہے۔

مزید :

علاقائی -