حکومت کا پنجاب میں بلدیاتی انتخابات نومبر میں کرانیکا فیصلہ، تیاریاں شروع

  حکومت کا پنجاب میں بلدیاتی انتخابات نومبر میں کرانیکا فیصلہ، تیاریاں شروع

  

لاہور (لیڈی رپورٹر،خبر نگار،آن لائن) پنجاب حکومت نے لاہور سمیت صوبے بھر میں بلدیاتی انتخابات نومبر کے وسط میں کرانے کا فیصلہ کرلیا جبکہ تحریک انصاف کی قیادت نے بلدیاتی انتخابات کی تیاری کے سلسلے میں اپنے کارکنوں کو متحرک کرنے کیلئے گلی محلوں میں پارٹی آفس کھولنے کی ہدایات جاری کردی ہیں۔ بتایا گیا ہے کہ بلدیاتی انتخابات کی حتمی تاریخ کا اعلان الیکشن کمیشن اور محکمہ لوکل گورنمنٹ پنجاب کے اہم اعلیٰ سطحی اجلاس کے بعد کیا جائے گا۔ اس سلسلے میں الیکشن کمیشن پنجاب ستمبر کے آخر تک حلقہ بندیوں کاکام مکمل کرلے گا۔ دوسرے مراحل میں ہونیوالے بلدیاتی انتخابات کا حتمی مرحلہ جنوری 2021ء کے وسط تک مکمل کرلیا جائے گا۔ذرائع کے مطابق بلدیاتی انتخابات کے پہلے مرحلے میں نیبر ہڈ اور ویلیج پنچائیت کونسل کے انتخابات کروائے جائیں گے۔الیکشن کمیشن حلقہ بندیوں کی ابتدائی فہرست 21 اگست کو جاری کرے گا اور 19 ستمبر تک فہرستوں پر اعتراضات دائر کیے جائیں گے، 26 ستمبر تک حلقہ بندیوں پر اپیلیں سنی جائیں گی جبکہ 27 ستمبر کو حلقہ بندیوں کی حتمی فہرست آویزاں کی جائے گی۔ اکتوبر اور نومبر کے15 دن الیکشن کے انتظامات کیلئے رکھے جائیں گے۔ الیکشن کے دوسرے مرحلے کا آغاز دسمبر کے وسط سے کیا جائے گا، جس میں میٹرو پولیٹن کارپوریشن، میونسپل کارپوریشن، تحصیل کونسل سمیت دیگر بلدیاتی انتخابات کروائے جائیں گے، محکمہ بلدیات پنجاب اور الیکشن کمیشن مشاورت کے بعد حتمی تاریخ کا اعلان کریں گے۔ جس پر پی ٹی آئی۔مسلم لیگ(ن)مسلم لیگ (ق) سمیت جماعت اسلامی اور دیگر سیاسی جماعتوں نے بلدیاتی انتخابات کی تیاریاں شروع کردی ہیں اور عیدالاضحی کے بعد امیدواروں سے درخواستیں وصول کی جائیں گئی۔

بلدیاتی انتخابات

مزید :

صفحہ اول -