موجودہ قوانین نے بلدیاتی اداروں کو ناکارہ بنا دیا ہے: فردوس شمیم

موجودہ قوانین نے بلدیاتی اداروں کو ناکارہ بنا دیا ہے: فردوس شمیم

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر)سندھ اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر اور پاکستان تحریک انصاف کے رہنما فردوس شمیم نقوی نے کہا ہے کہ موجودہ قوانین نے بلدیاتی اداروں کو بے اختیار اور ناکارہ بنادیا ہے۔اپوزیشن لیڈرفردوس شمیم نقوی نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ سندھ کے عوام کو سہولیات نہ ملنے کی وجہ بلدیاتی آرڈیننس 2013 ہے، مضبوط بلدیاتی نظام صوبے کی ضرورت ہے۔فردوس شمیم نقوی نے کہا کہ پی ٹی آئی ایم پی ایز نے لوکل گورنمنٹ بل کا مسودہ تیار کیا ہے، چاہتے ہیں ہر وارڈ لیول پر ایک مرد ایک عورت الگ الگ الیکشن لڑیں۔انہوں نے کہا کہ خواتین کو مین اسٹریم سیاست میں لانے کا یہ بہترین طریقہ ہے، ضلعی نظام کو شہری اوردیہاتی حکومتوں کو ختم کردیا ہے۔فردوس شمیم نے کہا کہ تعلقہ کاونسل دیہی اور لوکل ایریا کاونسل شہروں کے لیے ہوگی، ساڑھے سات سے دس ہزار آبادی پر وارڈ کاؤنسل بنائی جائے۔رہنما پی ٹی آئی فردوس شمیم نے کہا کہ شہری علاقے میں میئر ڈائریکٹ منتخب ہو اور شہری میئر کا براہ راست انتخاب کریں،ہمارے پیش کیے گئے بلدیاتی نظام کے مطابق میئر کابینہ بناسکے گا، کابینہ میں دوتہائی اکثریت فیصلے کرے گی۔انہوں نے مزید کہا کہ حکومتی نمائندگی بھی کابینہ میں ہوگی، اس کے علاوہ چھوٹے گاؤں میں پنچائت کا نظام رائج ہو۔

مزید :

صفحہ اول -