ڈی ایچ اے لاہور سٹی فراڈ کیس کی سماعت اگست کے تیسرے ہفتے تک ملتوی

  ڈی ایچ اے لاہور سٹی فراڈ کیس کی سماعت اگست کے تیسرے ہفتے تک ملتوی

  

لاہو(نامہ نگار خصوصی)لاہور ہائی کورٹ کے مسٹر جسٹس شہرام سرور چودھری اور مسٹر جسٹس طارق سلیم شیخ پر مشتمل ڈویژن بنچ نے ڈی ایچ اے لاہور سٹی فراڈ کیس کے مرکزی ملزم حماد ارشد کی درخواست ضمانت کی سماعت اگست کے تیسرے ہفتے تک ملتوی کرتے ہوئے فائل واپس چیف جسٹس کو بھجوادی تاکہ یہ کیس دوسرے بنچ کو تفویض کیا جاسکے،اس کیس میں بھی بنچ کے سربراہ جسٹس شہرام سرور چودھری بوجوہ سماعت سے معذرت کرلی،درخواست گزار کا موقف ہے کہ انہیں بلاجواز گرفتارکیاگیاہے جبکہ نیب حکام کا موقف ہے کہ 14جون 2010 ء کو ڈی ایچ اے اور گلوبیکو کے حماد ارشد کے درمیان معاہدہ طے پایا، نیب کو2مارچ 2011 ء کو ملزمان کے خلاف پہلی شکایت موصول ہوئی، 4فروری 2015 ء کو نیب نے شکایات کی تصدیق کی،ملزم حماد ارشد نے 10 ہزار 5 سو 45 جعلی الاٹمنٹ لیٹرز جاری کئے اور15 ارب 47 کروڑ اور 60 لاکھ روپے بٹورے،25ہزار کنال اراضی میں سے 30 فیصدپلاٹس شہداکو دیے جانے تھے،حماد ارشد نے 5 جون 2013 کو ڈی ایچ اے کی مرضی کے بغیر 1 ارب 34 کروڑ روپے سے زائد رقم اکاؤنٹ سے نکال لی،ملزم کی درخواست ضمانت خارج کی جائے۔

فراڈ کیس

مزید :

صفحہ آخر -