کرونا ایس او پیز کی خلاف ورزی،ضلعی انتظامیہ”مال“ بنانے میں مصروف

  کرونا ایس او پیز کی خلاف ورزی،ضلعی انتظامیہ”مال“ بنانے میں مصروف

  

لاہور(رپورٹ: یونس باٹھ) کرونا ایس او پیز کی خلاف ورزی پر دکانیں سیل‘ضلعی انتظامیہ نے لاکھوں روپے بٹورنے شروع کر دئیے۔ تفصیلات کے مطابق کرونا ایس او پیز کی خلاف ورزی کرنیوالوں کے خلاف آپریشن کے دوران لاہورمیں پابندی کے باوجود شاپس کھلی رکھنے پراب تک 130 دوکانوں کوسیل کیاگیا جبکہ غیر قانونی طور پر لگائی جانیوالی مویشی منڈی کا سامان بھی قبضے میں لے لیا گیا۔اسسٹنٹ کمشنر سٹی نے پولیس کے ہمراہ مل کرنے12 دوکانوں کو سیل کیاجبکہ پولیس کی جانب سے کرونا کے ایس او پیز کی آڑ میں تاجروں سے مبینہ طور پر پیسے بٹورنے کا بھی انکشاف ہوا ہے،دکانداروں اور شہریوں نے الزام لگایا ہے کہ پولیس کی بجائے ضلعی انتظامیہ کے اہلکار انھیں رشوت دینے پر مجبور کرتے ہیں ورنہ ہراساں کرتے ہیں اور پکڑے جانے پرانھیں ضلعی ا نتظامیہ کورشوت دے کررہائی حاصل کرنا پڑتی ہے۔ شہر کے اہم علاقوں میں تاجروں کو ایس او پیز کی آڑ میں بلیک میل کر کے ضلعی انتظامیہ کی جانب سے ان سے ہزاروں روپے منتھلی وصول کی جا رہی ہیں،یہ رقوم ضلعی انتظامیہ کے اہلکارمقامی اسسٹنٹ کمشنر کا نام استعمال کر کے اکھٹی کرتے ہیں،دوسری طرف تھانہ میں پکڑ کر لائے گئے افراد کو چھوڑنے کیلئے تھانوں کے اندر مبینہ طور پررشوت لے کر چھوڑنے کا انکشاف ہوا ہے تاہم ڈی آئی جی آپریشن اشفاق احمد خان نے کہا ہے کہ ایس او پی کی خلاف ورزی کے الزام میں تاجروں یا چھوٹے دکانداروں کو ہراساں کرنے والے پولیس اہلکاروں کے خلاف سخت کارروائی عمل میں لائی جائے گی کسی کو بھی معاف نہیں کیا جائے گااگر کسی بھی دکاندار یا تاجر سے کسی پولیس اہلکار نے ایس او پی کی خلاف ورزی پر رشوت وصول کی ہے وہ مذکورہ اہلکار کانام اور تھانے کی نشاندہی کریں وہ اس اہلکار کے خلاف نہ صرف کارروائی عمل میں لائیں بلکہ تاجر کے نقصان کا ازالہ بھی کریں گے۔

کرونا ایس او پیز

مزید :

صفحہ آخر -