نوشہرہ، جماعت اسلامی کا 27جولائی کوشوبراچوک میں دھرنے کا اعلان

نوشہرہ، جماعت اسلامی کا 27جولائی کوشوبراچوک میں دھرنے کا اعلان

  

نوشہرہ (بیورورپورٹ) جماعت اسلامی نوشہرہ نے ملک میں بڑھتی ہوئی مہنگائی، بیروز گار لاقانونیت اور پولیس و کسٹم کے غیر قانونی ناکوں سمیت دیگر سرکاری اداروں میں مالی و انتظامی بد عنوانیوں کے خلاف علم بغاوت بلند کر تے27جولائی کو شوبرا چوک میں عظیم الشان یک روزہ احتجاجی دھرنے کا اعلان کر دیا اس سلسلے میں امیر جماعت اسلامی ضلع نوشہرہ رافت اللہ خان نے نوشہرہ پریس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا اس موقع پر جماعت اسلامی کے ضلعی نائب امیر حاجی عنایت الرحمان، دوست محمد خان، سمیع الرحمان یوسفی، اور سابق ناظم نادر شاہ بھی موجود تھے انہوں نے کہا کہ نوشہرہ 6ہزار سے زائد دوکانیں اور گودام غیر ملکی نان کسٹم پیڈ کپڑے سے بھرے پرے ہیں کسٹم حکام ان کے خلاف کاروائی کرنے کی بجائے سڑکوں پر ناکے لگا کر اپنی ضرورت کے لئے کپڑاخرید نے والوں کو تنگ کر قوم کے دلوں میں سرکاری اداروں کے خلاف نفرت کی بیج بو رہے ہیں انہوں نے مزید کہا کہ ملک کی تمام سرکاری ادارے مالی بدعنوانیوں، قربا پروری، اور لاقانونیت کرپشن لوٹ مار کے گڑھ بن گئی ہیں جو کہ ملکی سالمیت کے لئے بھی انتہائی خطر ناک ہے کیونکہ پورا ملک اور حکومت مافیاز کے قبضے میں گھیرا ہوا ہے کیونکہ اس حکومت کے تمام وزراء چینی، آٹا مافیاز ہیں اور ان ہی مافیاز کی وجہ سے غریب عوام کو 10روپے کی روٹی 20روپے پر مل رہی ہے اور کوئی پرسان حال نہیں ہے انہوں نے مزید کہا کہ جماعت اسلامی ضلع نوشہرہ مافیاز سمیت سماجی برائیوں، کرپشن، لوٹ مار کے خلاف ڈٹ کر مقابلہ کریں گی اور اس حوالے سے مظاہروں، میڈیا، وزیر اعظم، چیف جسٹس و دیگر اعلیٰ حکام کو خطوط اور پارلیمنٹ کے اندر بھر پورآواز اٹھائے گی اور بہت جلد امیر جماعت اسلامی پاکستان سینتر سراج الحق اور صوبائی امیر مشتاق احمد خان کی قیادت میں ان تمام مالی و انتظامی بد عنوانیوں کے خلاف ملک گھیر احتجاج کریں گے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -