شہداء پولیس کے ورثاء کی مالی امداد کی جائے،شاہ خالد

شہداء پولیس کے ورثاء کی مالی امداد کی جائے،شاہ خالد

  

پشاور (سٹی رپورٹر)خیبر پختونخوامیں دہشت گردی اور بم دھماکوں کے دوران ڈیوٹی کے دوران وفات پانے اور زخمی پولیس اہلکاروں کے بچوں نے صوبائی حکومت ودیگر اعلیٰ حکام سے مطالبہ کیاکہ انکی مالی معاونت اور انہیں ملازمت دی جائے۔پشاور پریس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے متاثرین شاہ خالد ودیگر نے کہاکہ انکے والدین نے پشاور سمیت صوبے کے مختلف اضلاع میں دہشت گردی کے دوران جان کی قربانی دیکر شہریوں کی جان ومال کی حفاظت کی ہے،دہشت گردی کے نشانہ بننے والے جان بحق اور زخمی ضلع چارسدہ سے تعلق رکھنے والے پولیس اہلکاروں کے اہل خانہ انتہائی کسمپرسی میں گزررہی ہے،انہوں نے کہاکہ آئی جی پی خیبر پختونخواڈاکٹر ثناء اللہ عباسی نے محکمہ پولیس میں جونیئر کلرک کی بھرتی ایٹاٹیسٹ کے ذریعے کرنے کا فیصلہ کیاہے اور پولیس سٹینڈنگ آّرڈرکے تحت کانسٹیبل آسامیوں پر بغیر ایٹاٹیسٹ کی بھرتی ہوچکی ہے جبکہ کانسٹیبل بھرتی سے رہہ جانے والے سائلین جونیئر کلر ک کی بھرتی کیلئے موزوں ہیں۔لہٰذادوران ڈیوٹی وفات اور زخمی ہونیوالے پولیس اہلکاروں کے بچوں کو بھی محکمہ پولیس میں اپنی خدمات انجام دینے کیلئے بغیر ایٹاٹیسٹ کے بھرتی کیاجائے۔انہوں نے وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوامحمودخان اور آئی جی پولیس ڈاکٹر ثناء اللہ عباسی ودیگر حکام سے محکمہ پولیس میں اپنے ولدین کی جگہ ملازمت دینے کا مطالبہ کیا بصورت دیگرصوبائی اسمبلی کے سامنے دھرنادیاجائے گا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -