صوبے میں گندم کی کمی نہیں، پاسکو سے مزید چار لاکھ ٹن گندم خریدرہے ہیں، قلندر لودھی

صوبے میں گندم کی کمی نہیں، پاسکو سے مزید چار لاکھ ٹن گندم خریدرہے ہیں، قلندر ...

  

پشاور(سٹاف رپورٹر)خیبرپختونخوا کے وزیر خوراک قلندر خان لودھی نے کہا ہے کہ محکمہ خوراک کے پاس گندم کی کوئی کمی نہیں ہے اورعوام کو سبسڈائزڈآٹے کی فراہمی کے لئے فلور ملوں کو سرکاری نرخ پر گندم جاری کررہے ہیں۔ان خیالات کا اظہار صوبائی وزیر خوراک نے صوبے میں گندم کی صورت حال اور عوام کو بروقت سستے آٹے کی فراہمی کے حوالے سے جمعرات کے روز ایک اہم اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔ اجلاس میں محکمہ خوراک کے سیکرٹری خوشحال خان اور ڈائریکٹر زبیر احمد سمیت دیگر متعلقہ حکام نے شرکت کی۔وزیر خوراک نے متعلقہ حکام کو ہدایت دی کہ حالیہ کا بینہ اجلاس میں وزیراعلی محمود خان کی ہدایات کی روشنی میں صوبے میں گندم کی ترسیل اور دستیابی کو محکمہ ہذا ہر صورت یقینی بنائے۔ انہوں نے کہاکہ محکمے کے گوداموں میں گندم موجود ہے اورفلور ملوں کو جلد از جلد جاری کیا جائے۔ صوبائی وزیر خوراک کا کہنا تھا کہ چونکہ عام حالات میں فلور ملوں کو لیئن پیریڈ جو ستمبر سے شروع ہوتا ہے میں سرکاری گوداموں سے گندم جاری کی جاتی ہے لیکن موجودہ صورتحال اور عوام کو سستے آٹے کی بروقت فراہمی کے پیشِ نظر اسی ماہ میں ہی فلور ملوں کو سرکاری گوداموں سے گندم جاری کر رہے ہیں۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ محکمہ خوراک کے پاس تقریباً ایک لاکھ چالیس ہزار ٹن گندم موجود ہے جبکہ فوڈ سیکیورٹی کے پیش نظر پاسکو سے مزید چار لاکھ ٹن گندم کی خریداری کے لیے جلد مفاہمتی یاداشت پر دستخط بھی کئے جائیں گے۔قلندر خان لودھی نے مزید کہا کہ پاسکو سے گندم کی خریداری کے علاؤہ صوبے میں گندم کی وافر مقدار میں دستیابی کو یقینی بنانے کے لیے دیگر ذرائع بھی زیر غور ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت وزیراعظم عمران خان کے ویژن اور وزیراعلی محمود خان کی قیادت میں عوام دوست پالیسی پر عمل پیرا ہے۔ صوبائی حکومت صوبے کے عوام کو ہر قسم ریلیف دینے کے لیے کوشاں ہے۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ عوام کو سستے آٹے کی فراہمی ہماری اولین ترجیح ہے جسکے لئے محکمے کو پہلے سے ہی ہدایات جاری کی گئی ہیں

مزید :

پشاورصفحہ آخر -