عدالت نے فوری طورپر پب جی بحال کرنے کا حکم دیدیا

عدالت نے فوری طورپر پب جی بحال کرنے کا حکم دیدیا
 عدالت نے فوری طورپر پب جی بحال کرنے کا حکم دیدیا

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) اسلام آبادہائیکورٹ نے پی ٹی اے کا پب جی پر پابندی کا فیصلہ کالعدم قرار دیتے ہوئے پب جی پر پابندی کو فوری طور پر ہٹانے کا فیصلہ سنادیا۔

اسلام آبادہائیکورٹ کےجسٹس عامرفاروق نےپب جی پرپابندی کیخلاف درخواست پرفیصلہ سنا یا.نجی ٹی وی کے مطابق اسلام آبادہائیکورٹ نے کہا ہے کہ پب جی کو فوری طور پر بحال کیا جائے۔

اسلام آبادہائی کورٹ نے  کہا کہ پی ٹی اے پب جی گیم کے حوالے سے ایک ہفتے میں فیصلہ کرے، پی ٹی اے کی جانب سے پب جی گیم کو بند کیاگیا تھا۔

فیصلے میں کہا گیا ہے کہ اسلام آباد ہائی کورٹ نے آج پب جی گیم کو مشروط طور پر بحال کیا ہے، پی ٹی اے پب جی گیم کے حوالے سے ایک ہفتے میں فیصلہ کرے۔

کمپنی کے وکیل نے پب جی گیم پر پابندی ہٹانے کی درخواست دی تھی، درخواست پر عدالت نے فیصلہ محفوظ کرلیا تھا اور کہا تھا پی ٹی اے کو وضاحت دینی ہے کہ یہ گیم کس طرح خود کشی کا باعث بن رہا ہے اور عدالت کو دیکھنا ہے کہ معطلی کے احکامات میں قانونی طریقہ کار پرعمل ہواہے یا نہیں۔

درخواست گزار کمپنی کے وکیل نے کہا تھا کہ پی ٹی اے نے گیم کی بندش شے متعلق کمپنی کو کوئی نوٹس جاری نہیں کیا اور نہ ہی اس نے معطلی سے متعلق نوٹیفکیشن جاری کیا ہے۔

عدالتی حکم کے بعد اب پب جی کو پی ٹی این سے چلایا جاسکے گا۔

اس سے قبل پاکستان ٹیلی کام اتھارٹی کی جانب سے آن لائن گیم پب جی پر پابندی برقرار رکھنے کا فیصلہ کیا گیاتھا۔

پی ٹی اے کا کہنا ہے کہ پب جی گیم انتظامیہ سے گیم کی تفصیلات اور بچوں پر برے اثرات سے بچاؤ کی تدابیر پر جواب مانگا تھا، انتظامیہ نے پب جی کے سیشنز، پاکستان میں استعمال کنندگان کی تعداد اور کنٹرولز کی تفصیلات نہیں دیں۔

سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر پی ٹی اے کی جانب سے جاری کردہ بیان کے مطابق پی ٹی اے نے گیم کی انتظامیہ سے پب جی کے سیشنز، اس کو پاکستان میں استعمال کرنے والوں کی اور کمپنی کی طرف سے نافذ کردہ کنٹرولز کی تفصیلات طلب کی تھیں، تاہم پب جی کی طرف سے کوئی جواب موصول نہیں ہوا۔

  

خیال رہے کہ آن لائن گیم پب جی پر پابندی برقرار رکھنے کے فیصلے کے بعد سوشل میڈیا پر سخت ردعمل سامنے آیا اور سوشل میڈیا صارفین کے ساتھ ساتھ کچھ سوشل میڈیا ایکٹوسٹ کی جانب سے بھی اس پر آواز اٹھائی گئی۔ پی ٹی اے کی جانب سے اس فیصلے کے بارے میں آگاہ کرنے کے بعد ٹوئٹر پر 'وزیر آئی ٹی مستعفی ہو'، 'پب جی ان پاکستان'، 'ان بین پب جی پاکستان' جیسے ہیش ٹیگ ٹرینڈ کرتے رہے۔ واضح رہے کہ یکم جولائی کو پی ٹی اے نے 'معاشرے کے مختلف طبقات سے شکایات موصول ہونے' کے بعد پب جی گیم پر پابندی عائد کردی تھی۔

مزید :

Breaking News -اہم خبریں -قومی -سائنس اور ٹیکنالوجی -