حکومت مافیاز کے ہاتھوں یرغمال ہوکر بے بس ہوچکی ،اب حکمران غریب سے ۔۔۔تحریک انصاف کی سابق اتحادی جماعت نے وزیر اعظم کو آڑے ہاتھوں لے لیا 

حکومت مافیاز کے ہاتھوں یرغمال ہوکر بے بس ہوچکی ،اب حکمران غریب سے ۔۔۔تحریک ...
حکومت مافیاز کے ہاتھوں یرغمال ہوکر بے بس ہوچکی ،اب حکمران غریب سے ۔۔۔تحریک انصاف کی سابق اتحادی جماعت نے وزیر اعظم کو آڑے ہاتھوں لے لیا 

  

پشاور(ڈیلی پاکستان آن لائن)امیر جماعت اسلامی خیبر پختونخواہ سینیٹر مشتاق احمد خان نے ادویات کی قیمتوں میں بے تحاشہ اضافے کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کے حکومت غریب عوام سے جینے کا اور علاج کا حق چھیننا چاہ رہی ہے، تحریک انصاف کی 2 سالہ حکومت میں ادویات کی قیمتوں میں 6 بار 200 فیصد تک اضافہ ہوا ہے، فارما سوٹیکل مافیا کے ہاتھوں حکومت یرغمال ہوکر بی بس ہوچکی ہے، ماضی میں وزیر اعظم عمران خان نے اپنے وزیر مملکت کو فارماسوٹیکل مافیا کی سرپرستی کرنے اور کرپشن پر برطرف کرتے ہوئے وعدہ کیا تھا کے ان کے خلاف سخت کارروائی کرتے ہوئے ادویات کی قیمتوں میں کمی کریں گے لیکن وزیر اعظم ان کے سامنے بے بس ہیں نا ہی ان کے خلاف کارروائی کی اور نا قیمتوں میں کمی ہوئی الٹا مزید کئی بار اضافہ کیا گیا۔

 سینیٹ اجلاس میں ادویات کی قیمتوں میں بے تحاشا اضافہ کے خلاف جمع کرائی گئی تحریک پر گفتگو کرتے ہوئےسینیٹر مشتاق احمد خان نے کہا کے اس وقت پاکستان میں شوگر کے 6 کروڑ، گردوں کے 1.7 کروڑ، ہیپا ٹائٹس کے 1.5 کروڑ اور دل کے امراض کے 40 فیصد مریض ہیں،اس وقت 7 کروڑ افراد خط غربت سے نیچے زندگی بسر کررہے ہیں،کورونا کی وجہ سے 1 کروڑ سے زائد افراد بے روزگار ہوگئے ہیں اور مہنگائی میں بے تحاشا اضافہ ہوگیا ہے،ایسے میں حکومت کی جانب سے ادویات کی قیمتوں میں اضافہ عوام سے زندگی کا حق چھیننے کے مترادف ہے۔

انہوں نے کہا کے پاکستان میں ادویات کی قیمتیں پورے خطے میں سب سے زیادہ ہیں،فارما انڈسٹری 15 فیصد سالانہ کے حساب سے ترقی کر رہی ہے اور اربوں روپے کا ناجائز منافع کما رہی ہے۔انہوں نے ڈرگ ریگولیشن اتھارٹی پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا کہ وہ فارما مافیا کی سب سے بڑی سہولت کار ہے،ڈریپ نے خود سپریم کورٹ کے سامنے اعتراف کیا ہے کہ اس وقت پاکستان میں 22 ہزار ادویات مارکیٹ میں موجود ہیں جس کی قیمتوں کا کوئی ریکارڈ ان کے پاس نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس وقت ڈریپ کی سرپرستی میں پاکستانی فارما انڈسٹری بھارت سے غیر قانونی طریقے سے خام مال خرید کر استعمال کررہی ہے جس کی مالیت اربوں ڈالرز میں ہے۔ انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کے ادویات کی قیمتوں میں اضافہ واپس لیا جائے اور فارما مافیا کو لگام ڈالتے ہوئے حکومتی صفوں میں موجود اس کے سرپرستوں کے خلاف کاروائی کی جائے۔

مزید :

علاقائی -خیبرپختون خواہ -پشاور -