ضیا الرحمان کی کراچی میں ڈپٹی کمشنر تعیناتی،ایم کیو ایم نے ایسی بات کہہ دی کہ مولانا فضل الرحمان اور بلاول بھٹو ایک دوسرے کا منہ تکنے لگیں گے  

ضیا الرحمان کی کراچی میں ڈپٹی کمشنر تعیناتی،ایم کیو ایم نے ایسی بات کہہ دی کہ ...
ضیا الرحمان کی کراچی میں ڈپٹی کمشنر تعیناتی،ایم کیو ایم نے ایسی بات کہہ دی کہ مولانا فضل الرحمان اور بلاول بھٹو ایک دوسرے کا منہ تکنے لگیں گے  

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن )ایم کیو ایم پاکستان کے رکن سندھ اسمبلی خواجہ اظہار الحسن نے کہا ہے کہ سندھ حکومت نے شہری سندھ پر شب خون ماراہے،آئی جی سندھ کلیم امام سندھ حکومت سے ہضم نہیں ہورہا تھا،کے پی کے کی کسی شخصیت کی قابلیت پرکوئی اعتراض نہیں،وہ مولانافضل الرحمان کے بھائی ہیں اس پر بھی اعتراض نہیں،پیپلزپارٹی اٹھارویں ترمیم کو غلط استعمال کررہی ہے۔

سندھ اسمبلی کےباہرمیڈیاسےگفتگو کرتےہوئےخواجہ اظہار الحسن نےکہا کہ لگتا ہے اے پی سی کی افہام وتفہیم کا نتیجہ ہمیں بھگتنا پڑے گا،میں نئے ڈی سی سے مطالبہ کروں گا کہ وہ تعیناتی کورد کریں، پیپلزپارٹی اٹھارویں ترمیم کو غلط استعمال کررہی ہے،جعلی ڈومیسائیل پرایک لاکھ سے زائد نوکریاں دی گئی ہیں کل 128 ہزار سرکاری ملازم ہیں، ڈی سیزکی نگرانی میں پیسے لیکر جعلی ڈومیسائل بنائے گئے،ڈی سی کورنگی سینٹرل ودیگراضلاع میں پیسے لیکرجعلی ڈومیسائل بنائے جارہے ہیں ،کراچی سے باہر کے لوگوں کی تعیناتی پراعتراض نہیں پراس کے بچوں کا حق مارنے نہیں دیں گے،ڈی دی سینٹرل کی تعیناتی کومستردکرتے ہیں،تین مزید پٹیشنزدائرکرنے جارہے ہیں عدالتیں جلد انصاف فراہم کریڈومیسائیل اورسالڈ ویسٹ کے خلاف عدالت میں ہیں حکومت اورعدالتیں انصاف نہ دیں تو عوام کہاں جائے؟ان کو لسانیت اورعصبیت کی بنیاد پر ہٹایا گیا،ڈیپوٹیشن پر تعیناتی سپریم کورٹ قانون کی خلاف ورزی ہے،سندھ حکومت نےکے پی افسرکی تعیناتی پر اعتراض کیوں نہیں کیا؟مولانا فضل الرحمان ہمارے لئے قابل احترام ہیں تاہم ہمارا مطالبہ ہے کہ  ضیا الرحمان پیپلز پارٹی کی تعیناتی رد کردیں۔

انہوں نے کہا کہ ماورا قانون اور ماورا آئین عمل ہوا ہے، پیپلز پارٹی کی دیہی سندھ کی حکومت نے ایک اور شب خون مارا ہے، دوسرے صوبے سے کراچی میں ڈپٹی کمشنر کا تعنات ہونا،ایسا لگتا ہے، اے پی سی کا خمیازہ کراچی والوں کو بھگتنا پڑے گا،میں آنے والے ڈپٹی سے مطالبہ کرتا ہوں کہ آپ پیپلز پارٹی کی تعیناتی کو رد کریں، آپ کے کندھے پر پیپلز پارٹی کے ناپاک عزائم چھپے ہیں،18و یں ترمیم پیپلز پارٹی کے لیے ظلم کا ایسا ہتھیار ہے، جو دوسری اکائی کے لیے استعمال کررہی ہے، کراچی میں پہلے ہی جعلی ڈومیسائل پر نوکریاں دی گئی ہیں، ایک لاکھ 92 ہزار نوکریاں ہیں جن میں ایک لاکھ جعلی ہیں،ڈپٹی کمشنرز نے رشوت خوری کا بازار گرم کر رکھا ہے،جہاں جہاں پیسے لیکر لوگوں کو بلیک میل کیا جارہا ہے ان کو بے نقاب کروں گا،لوگوں سے منڈیاں لگانے کے پیسے لیے جارہے ہیں،گرین بیلٹ پر ڈپٹی کمشنر کا عملہ ہے۔

انہوں نے کہا کہ کراچی باہر کے لوگوں کی آماج گاہ بن گیا ہے، کراچی کے نوجوانوں کو بے روزگار کرکے انہیں جرائم میں ڈال دیا گیا ہے،ہم کے پی کے کے فیصلے کو مسترد کرتے ہیں،ہم تین درخواستیں عدالتوں میں جمع کرائی گے، چیف جسٹس سے استدعا ہے کہ ٹائم فریم پر ٹائم دیں،ہم ڈھائی سال سے جعلی ڈومیسائل پر عدالت میں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کے غریب عوام پس رہے ہیں،آئی جی سندھ تو ان کو قبول نہیں ہورہا تھا،ایک تو وہ کلیم اور امام تھا،کلیم امام کا ڈومیسائل اس شہر کا تھا اس لیے نفرت تھی،عصبیت اور نفرت کی وجہ سے انہیں بھیجا ہے، کے پی کے کا اگر افسر وفاق نے دیا ہے تو آپ نے اس کو فوری سینٹرل میں لگا دیا ہے۔ انہوں نے تو قوانین کے کپڑے اتار دئیے ہیں، آپ اپنے گھر کے دروازے بند کریں،کراچی کی قیمتی زمینوں پر کوئی ادارہ نوٹس لے رہا ہے،مولانا  فضل الرحمن ہمارے لیے قابل احترام ہیں۔

یاد رہے کہ سندھ حکومت نے مولانا فضل الرحمان کے بھائی ضیا الرحمان کو  ضلع وسطی کراچی کا ڈپٹی کمشنر تعینات کیا ہے ۔

مزید :

علاقائی -سندھ -کراچی -