سندھ میں ہڑتال سے تاجروں اور صنعتکاروں کو اربوں روپے کانقصان

سندھ میں ہڑتال سے تاجروں اور صنعتکاروں کو اربوں روپے کانقصان

      

کراچی(اے پی اے) کراچی سمیت سندھ کے کئی علاقوں میں شہر میں کاروباری مراکز، انڈسٹری زونز، پبلک ٹرانسپورٹس، پیٹرول پمپس اور سی این جی اسٹیشنز بند ہونے سے تاجروں اور صنعتکاروں کو اربوں روپے نقصان ہوا۔کراچی میں متحدہ قومی موومنٹ کے رکن سندھ اسمبلی ساجد قریشی اور ان کے بیٹے کے قتل کے خلاف کراچی، حیدرآباد، میرپورخاص، سکھر اور دیگر علاقوں میں ہڑتال ہے۔ جس کے بعد ٹرانسپورٹرز،،چھوٹے بڑے کاروباری مراکز، پیٹرول پمپس بھی بند رہے۔ شہر کی سڑکوں پر ٹرانسپورٹ نہ ہونے کے باعث دفاتروں میں بھی حاضری نہ ہونے کے برابر رہی۔ کراچی کے چھ صنعتی زون جس میں سائیٹ، کورنگی ، لانڈھی ،نارتھ کراچی، ایف بی ایریا اور سائیٹ سپر ہائے وے کے صنعتیں میں بھی ملازمین کی حاضری کم ہونی کی وجہ سے پیداوار نصف فیصد سے بھی کم رہی۔

 ، جس کی وجہ سے ناصرف ہزاروں صنعتوں کو پیداوار کی مد میں اربوں روپے کا نقصان اٹھانا پڑا بلکہ یومیہ اجرت والے مزدور بھی خالی ہاتھ رہے، دوسری جانب کراچی بندرگاہ پر بھی کاروباری متاثر ہوا۔ کسٹمز ایجنڈ ایسو سی ایشن کے صدر سیف اللی خان کے مطابق شہر کراچی کے موجودہ حالات کے پیش نظرکام مکمل بند رہا۔ جس کی وجہ سے یومیہ ہزاروں کینٹینرز کی کلئیرنز رک گئی۔ جس سے برآمد اور درآمد کنندگان کو اربوں روپے کا نقصان اٹھانا پڑا ہے ،

مزید : کامرس