اسلحے کی پہلی کھیپ موصول ہو چکی ‘ شامی باغیوں کا اعلان

اسلحے کی پہلی کھیپ موصول ہو چکی ‘ شامی باغیوں کا اعلان

       

دمشق، ما سکو (آن لائن)شامی باغیوں نے کہا ہے کہ انہیں جدید اسلحہ فراہم کر دیا گیا ہے اور قطر میں شام پر ہونے والی کانفرنس میں وہ مزید اسلحے کا مطالبہ کریں گے۔ فری سیریئن آرمی کے انتظامی رابطہ کار لوئی المقداد نے گزشتہ روز بتایا کہ موصول ہونے والا اسلحہ شام میں باغیوں میں تقسیم کر دیا گیا ہے۔ ان کے بقول عرب ممالک اور دیگر ریاستیں اسلحے کی دوسری کھیپ جلد ہی روانہ کرنے والی ہیں تاہم انہوں نے اس حوالے سے مزید تفصیل نہیں بتائی۔ دریں اثناء لاس اینجلس ٹائمز نے اپنی ایک رپورٹ میں کہا ہے کہ سی آئی اے اور دیگر امریکی اسپیشل فورسز ترکی اور اردن میں شامی باغیوں کو تربیت فراہم کر رہی ہیں۔ادھرروسی صدر ولادیمیر پیوٹن نے شامی باغیوں کو اسلحہ فراہم کرنے پر تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر فوری طور پر صدر بشار الاسد اقتدار سے الگ کر دیے جاتے ہیں تو وہاں ایک خطرناک سیاسی خلاء پیدا ہو جائے گا۔ گزشتہ روز سینٹ پیٹزر برگ میں جرمن چانسلر انگیلا میرکل کے ساتھ ایک پینل میں گفتگو کرتے ہوئے پوٹن نے مزید کہا کہ شامی صدر کے خلاف ’دہشت گرد گروہ‘ بھی متحرک ہیں۔ اس موقع پر انہوں نے دمشق حکومت کو اسلحے کی فروخت کا دفاع کیا۔ دوسری طرف اقوام متحدہ نے بھی خبردار کیا ہے کہ شامی حکومت اور باغیوں کو اسلحے کی فراہمی سے فریقین کی جانب سے جنگی جرائم کے مرتکب ہونے کا امکان زیادہ ہو جائے گا۔

مزید : عالمی منظر