شامی باغیوں کو ہتھیاروں اور جنگی سازوسامان سے لیس کرنے کا فیصلہ

شامی باغیوں کو ہتھیاروں اور جنگی سازوسامان سے لیس کرنے کا فیصلہ

                                                  دوحہ(این این آئی) قطر میں فرینڈزآف سیریا کانفرنس میں شامی حکومت کے مخالفین کو ہتھیاروں اور دیگر ضروری جنگی سازو سامان سے لیس کرنے کا فیصلہ کرلیا گیا۔ دوحا میں ہونے والے اجلاس میں امریکا، برطانیہ، فرانس، جرمنی، اٹلی، مصر، اردن، قطر، سعودی عرب، ترکی اور متحدہ عرب امارات کے وزرائے خارجہ نے شرکت کی۔ امریکی وزیر خارجہ جان کیری نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے شام کی اپوزیشن جماعتوں کی مدد کرکے عدم توازن کو ختم کرنے کی تجویز دی۔ اجلاس کے بعدجاری کردہ اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ دمشق حکومت کی مخالف اعلی فوجی کونسل کے ذریعے اپوزیشن کو فوجی مدد فراہم کی جائے گی۔ اعلامیے میں حزب اللہ، ایران اور عراق کے جنگجووں کی مداخلت کو تشویشناک قرار دیتے ہوئے انہیں فوری طور پر شام سے نکل جانے کو کہا گیا ہے۔ اجلاس کے بعد صحافیوں سے بات کرتے ہوئے قطر کے وزیراعظم شیخ حماد بن جاسم الثانی نے بتایا کہ اجلاس کے دوران شام کی فوج کے موجودہ توازن اور ملک کی موجودہ صورتحال میں تبدیلی کے حوالے سے خفیہ فیصلے کیے گئے۔ انہوں نے بتایا کہ اجلاس میں شریک 2 کے علاوہ دیگر تمام ممالک نے فوجی کونسل کے ذریعے شامی باغیوں کو مدد فراہم کرنے کے طریقے سے اتفاق کیا ہے۔قبل ازیں اجلاس میں شریک فرانسیسی وزیر خارجہ لورنٹ فیبئس نے کہاکہ تمام ممالک نے لبنان کی مسلح سیاسی تنظیم حزب اللہ اور ایران سے مطالبہ کیا کہ وہ شامی صدر بشار الاسد کی مدد اور وہاں اپنی خفیہ دخل اندازی بند کریں۔

مزید : عالمی منظر