حکومت ایران کے راستے سمگلنگ فوری روکے: راؤخورشیدعلی

حکومت ایران کے راستے سمگلنگ فوری روکے: راؤخورشیدعلی

لاہور(کامرس رپورٹر) معروف بزنسمین راؤ خورشید علی نے کہا کہ ہے کہ حکومت فوری طور پر ایران کے راستے ہونے والی سمگلنگ کی روک تھام کیلئے اقدامات کرے کیونکہ پاک ایران بارڈر کے ذریعے ہونے والی سمگلنگ کی وجہ سے مقامی انڈسٹری کو سالانہ اربوں روپے کا نقصان پہنچ رہا ہے خصوصاً کیمیکل انڈسٹری بری طرح متاثر ہو رہی ہے ۔ یہ بات انہوں نے گزشتہ روز اپنے ایک بیان میں کہی۔

انہوں نے کہاکہ اس وقت غیر قانونی راستے سے آنے والے سمگل شدہ مال سے شہر کی مارکیٹیں بھری پڑی ہیں ، بارڈرز سے مارکیٹوں تک آنے والا سمگلنگ کا مال بغیر ملی بھگت کبھی بھی نہیں پہنچ سکتا ،جب تک متعلقہ محکموں کے افراد کا تعاون اور افسران کی آشرباد شامل نہ ہو۔انہوں نے محکمہ کسٹم پر زور دیا ہے کہ بارڈر پر ایماندار افسران کو تعینات کیا جائے اور سمگلنگ کے حوالے سے بارڈر پر سختی کرنے کی ضرورت ہے تاکہ سمگلنگ ہو کر آنے والے اشیاء کو روکا جا سکے ۔ انہوں نے کہا کہ سمگلنگ کی وجہ سے سالانہ اربوں روپے قومی خزانہ میں جانے کی بجائے سمگلنگ مافیا کی جیبوں میں چلے جاتے ہیں ۔ انہوں نے کہاکہ اگر متعلقہ محکموں میں چھپی ہوئی کالی بھیٹروں کی بیخ کنی کر دی جائے تو سمگلنگ پر کسی حد تک قابوپایا جا سکتاہے ۔ انہوں نے کہا کہ ٹیکسٹائل انڈسٹری کے بعد کیمیکل انڈسٹری ملک کی سب سے بڑی انڈسٹری ہے جس کو اس وقت شدید بحران کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔

مزید : کامرس