چین : پانچ سو سال قدیم روایت ‘10 ہزار کتوں کا گوشت کھانے کی تیاریاں

چین : پانچ سو سال قدیم روایت ‘10 ہزار کتوں کا گوشت کھانے کی تیاریاں

بیجنگ(آن لائن) جنوبی چین کے گوانگشی صوبے کے شہر یولن میں ہر سال موسمِ گرما کے وسط میں ایک اندازے کے مطابق دس ہزار کتے پکا کر کھا لئے جاتے ہیں۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق کتے کھانے کی یہ روایت تقریبا پانچ سو سال قدیم بتائی جاتی ہے۔ یہ روایت چین اور جنوبی کوریا کے علاوہ مختلف ممالک میں دھوم دھام سے منائی جاتی ہے۔ تاہم یولن میں یہ تقریب حال ہی میں شروع ہوئی ہے۔گوانگشی صوبے کے یولن شہر کے میلے میں اس سال بھی ہزاروں کتوں کو پکا کر کھایا جائے گا۔ یولِن کے دکاندار اور رہائشیوں کا کہنا ہے کہ کتوں کو بے رحمی سے نہیں مارا جاتا۔ دوسری جانب چین میں کتوں کا گوشت کھانے کے میلے کی مخالفت میں اضافہ ہو رہا ہے۔ گزشتہ کئی سالوں سے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ پر چین میں جانوروں کے حقوق پر کام کرنے والے اور دیگر افراد یولن میں ہونے والے اس میلے کی مخالفت کرتے ہیں۔ادھر جانوروں کے حقوق کے لئے کام کرنے والی تنظیموں کا کہنا ہے کہ جانورں کی ہلاکت ظالمانہ ہے۔ اس کے علاوہ انھوں نے انٹرنیٹ پر بھی مہم چلائی ہے یہاں تک کہ کتوں کو بچانے کے لیے انھیں خریدا بھی ہے۔

مزید : عالمی منظر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...