پاکستان پولٹری ایسوسی ایشن کا خام مال پر امپورٹ ڈیوٹی اور سیلز ٹیکس بھی واپس لینے کا مطالبہ

پاکستان پولٹری ایسوسی ایشن کا خام مال پر امپورٹ ڈیوٹی اور سیلز ٹیکس بھی واپس ...

لاہور(کامرس رپورٹر) پاکستان پولٹری ایسوسی ایشن کے چیئرمین ڈاکٹر مصطفی کمال نے پولٹری کے خام مال پر 10 فیصد امپورٹ ڈیوٹی اور 10 فیصد سیلز ٹیکس بھی واپس لینے کا مطالبہ کیا ہے، گزشتہ روز ’’پاکستان‘‘ سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پولٹری ایسوسی ایشن کے پر زور مطالبے پر 19جون کو وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے پولٹری انڈسٹری پر لگائے گے 5 فیصد سیلز ٹیکس کو واپس لے لیا ۔تاہم سویا بین میل کی درآمد پرڈیوٹی اور سیلز ٹیکس ابھی موجود ہے جسے واپس ہونا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ پولٹری زراعت کے شعبوں میں سب سے منظم سیکٹرہے ۔ اس وقت پولٹری انڈسٹری کل استعمال ہونے والے گوشت کا 40فیصد حصہ مہیا کررہی ہے ۔ اور تقریبا 18لاکھ لوگوں کا روزگار اسی شعبے سے وابستہ ہے ۔ اور سرمایہ کاری 700ارب سے زائد ہو چکی ہے۔ اس تناسب سے حکومت کو بھی محاصل ملتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ انڈے اور مرغی ایک ایسا انیمل پروٹین ہے جو عام آدمی کی پہنچ میں ہے اس لئے پولٹری پر عائد ٹیکسز سے پیداواری لاگت میں اضافہ ہو گا اور یہ بھی غریب کی پہنچ سے دور ہو جائیگی۔ رمضان بازاروں میں پولٹری مصنوعات کی سستے داموں فراہمی کے حوالے سے پوچھے گئے ایک سوال کے جواب میں ا نہوں نے بتایا کہ پاکستان پولٹری ایسوسی ایشن نے خادم اعلٰی پنجاب میاں محمد شہباز شریف کے کہنے پر پنجاب بھر کے 331 رمضان بازاروں میں مرغی کا گوشت 15 روپے فی کلو بازار سے بارعایت اور انڈے 5 روپے فی درجن بارعایت فراہم کرنے کا اعلان کیا ہے تاکہ مرغی کاگوشت اور انڈے عام آدمی کو کم نرخوں پر فراہم کیے جا سکیں۔رمضان بازاروں میں ان کم نرخوں پر مرغی کا گوشت اور انڈے کی فراہمی کو یقینی بنانے کے لیے لایؤ سٹاک اور پی پی اے کی جانب سے ٹیم بھی تشکیل دی گئی جو روزانہ وہاں جا کرریٹس کو چیک کرتی ہے۔اس کے لیے لاکھوں روپے کی امداد ی رقم پی پی اے کی طرف سے پولٹری سیلز سنٹر کو فراہم کی جا رہی ہے۔

 

مزید : میٹروپولیٹن 1

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...