جامع مسجد ابوہریرہ اہلحدیث کریم بلاک کی سڑکیں ایک ماہ کیلئے بند ‘ مکین سراپا احتجاج

جامع مسجد ابوہریرہ اہلحدیث کریم بلاک کی سڑکیں ایک ماہ کیلئے بند ‘ مکین ...

 لاہور (ڈویلپمنٹ سیل) جامع مسجد ابوہریرہ اہلحدیث کریم بلاک علامہ اقبال ٹاؤن کی سکیورٹی کے نام پر چاروں اطراف کی سڑکیں ایک ماہ کیلئے بند کردی گئیں ہیں۔ کریم بلاک کے رہائشی اور کریم بلاک کمرشل مارکیٹ کے تاجر اس اقدام کے خلاف سراپا احتجاج بن گئے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ مسجد کی حدود میں سکیورٹی ضرور کی جائے۔ 500 سے 800 میٹر دور تک کانٹے دار تاریں بچھانا یا ٹینٹ لگانا سمجھ سے بالاتر ہے۔ بچے، بوڑھے، خواتین گھروں سے نکلنا محال بنا دیا گیا ہے، ہمارا عید کا سیزن ہے راستے بند ہونے سے ہمارا کاروبار تباہ ہوگیا ہے، مارکیٹ میں گاڑیاں آسکتی ہیں نہ پیدل گاہک آسکتا ہے، سکیورٹی کے نام پر ہمارا معاشی قتل کیا جا رہا ہے، اوپن پارک میں جمعۃ المبارک کی نماز کی ادائیگی خود سکیورٹی رسک ہے، جمعۃ المبارک کی نماز 8 دن بعد آئے گی، راستے ایک ماہ کے لئے بند کر دئیے گئے ہیں، کریم بلاک کے تاجر پھٹ پڑے، وزیراعلیٰ نوٹس لیں مسجدکو آنے والے راستوں کو بند کرنے اور کانٹے دار تاریں لگانے سے نمازیں بھی ناراض، دور دور تک کانٹے دار تاریں لگانے اور پردے دار ٹینٹ لگانے سے ہماری دوکانوں کی طرف آنے والے راستے چاروں اطراف سے بند ہیں، ہم دوکانیں بند کر دیں ہمیں بتایا جائے تاج برادری سراپا احتجاج۔ کریم بلاک کے رہائشیوں سے گفتگو کرتے ہوئے ہمارے بچوں کو گھر سے نکلنا مشکل بنا دیا گیا ہے، جمعۃ المبارک کو بند کرنا سمجھ میں آتا ہے، پورا مہینہ بند کرنا ظلم ہے، سکیورٹی کے نام پر پورے علاقے میں خوف کی فضا پیدا کر دی گئی ہے، ہر وقت لگتا ہے کہ دہشت گرد آرہے ہیں، بتایا نہیں جا رہا خطرہ کس کو کس سے ہے، خوف کی فضا پیدا کی جا رہی ہے، مسجد کا عملہ اور انتظامیہ کے بچے بھی مسجد کے راستوں کو بند کرنے کے خلاف بولنے والوں کو دھمکاتے نظر آتے ہیں، کریم بلاک کے تاجروں نے روزنامہ ’’پاکستان‘‘ کو بتایا 10 دن سے فارغ بیٹھے ہیں، رمضان رحمتیں لے کر آیا ہے مگر مسجد انتظامیہ نے پولیس سے ملی بھگت کرکے ہمارے رزق کے پیچھے پڑ گئے ہیں، کاروبار تباہ ہوگیا ہے۔ وزیراعلیٰ نے فوری نوٹس لے کر راستے نہ کھلوائے تو احتجاج کے لئے سڑکوں پر آنے پر مجبور ہوں گے۔ جامعہ مسجد ابوہریرہ کی انتظامیہ کا سکیورٹی کے نام پر روکے گئے راستوں اور بچھائی گئی کانٹے دار تاروں سے لاتعلقی کا اظہار کر دیا۔ اس حوالے سے ذرائع نے روزنامہ ’’پاکستان‘‘ کو بتایا کہ پولیس نے سب کچھ کیا ہے، انتظامیہ کا کہنا ہے کہ سکیورٹی کی ذمہ داری پولیس کی ہے ہم راستے کیوں روکیں گے، پولیس راستے کھول دے ہمیں اعتراض نہیں ہے، سکیورٹی یقینی بنانے کی درخواست ضروری ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...