2015-16کا بجٹ منظور ‘ لوڈشیڈنگ اور کراچی میں ہلاکتوں کیخلاف اپوزیشن سراپا احتجاج ‘ جمعہ کو یوم سوگ کا اعلان

2015-16کا بجٹ منظور ‘ لوڈشیڈنگ اور کراچی میں ہلاکتوں کیخلاف اپوزیشن سراپا ...

 اسلام آباد(خصوصی رپورٹ)قومی اسمبلی نے مالی سال2015-16کا بجٹ منظور کر لیا،ملک بھر میں غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ اور کراچی سمیت سندھ بھر میں گرمی سے ہونے والی ہلاکتوں پر اپوزیشن سراپا احتجاج بن گئی،جمعہ کو یوم سوگ منانے کا اعلان کرتے ہوئے وزیر پانی و بجلی خواجہ آصف کے استعفے کا بھی مطالبہ کر دیا۔تفصیلات کے مطابق قومی اسمبلی کا اجلاس شروع ہوا تو سخت گرمی اور لوڈشیڈنگ کے باعث ہلاک ہونیوالوں کیلئے دعائے مغفرت کی گئی۔ اپوزیشن ارکان نے حکومت کو سخت تنقید کا نشانہ بنایا اور حکومت کیخلاف نعرے بازی کرتے ہوئے ایوان سے واک آوٹ کیا۔اس دوران حکومت نے بجٹ بھی منظور کر لیا،فنانس بل کی شق وار منظوری لی گئی،اپوزیشن کی کٹوتی کی تحاریک پیش نہ کی جا سکیں،ارکان قومی اسمبلی اور سینیٹ کی متعدد ترامیم منظور کر لی گئیں، حکومت کی اپوزیشن کو مناکر ایوان میں لانے کی کوشش کامیاب نہ ہوسکیں جبکہ قومی اسمبلی میں اپوزیشن جماعتوں کے قائدین نے ایوان کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کراچی میں سینکڑوں افراد کی ہلاکت پر جمعہ کو یوم سوگ منانے کا اعلان کر دیا ۔قبل ازیں ایوان میں خطاب کرتے ہوئیخورشید شاہ کا کہنا تھا کہ اپوزیشن کی غیر موجودگی میں مطالبات زر منظور کروائے گئے جو جمہوری روایات کی خلاف ورزی ہے۔ انہوں نے کہا کہ کراچی کے سرد خانوں میں گرمی سے ہلاک ہونے والے افراد کی لاشیں رکھنے کیلئے جگہ کم پڑ گئی ہے لیکن حکومت کو کوئی پرواہ نہیں ،تحریک انصاف کے رہنما شاہ محمود قریشی نے کہا کہ اگر وزیر پانی و بجلی اتنے ہی مصروف ہیں تو وزارت چھوڑ دیں۔ شیخ رشید نے کہا کہ لوڈ شیڈنگ پر پانی و بجلی کے بڑے وزیر خواجہ آصف اور چھوٹے وزیر عابد شیر علی کو مستعفی ہو جانا چاہئے۔ اجلاس کے دوران جمشید دستی نے سپیکر ڈائس کے سامنے کھڑے ہوکر ایجنڈے کی کاپی پھاڑ دی۔دریں اثناء قومی اسمبلی میں وزیر خزانہ اسحق ڈار نے کہا ہے کہ اپوزیشن ملکی معیشت پر سیاست کی بجائے اقتصادی چارٹر پر حکومت کے ساتھ اتفاق کرے ، کیونکہ اپوزیشن کو ساتھ لے کر چلنا چاہتے ہیں ، اسی لئے ان کی عدم موجودگی میں بھی بجٹ بحث کے دوران دی گئی ان کی تجاویز کو بحث کا حصہ بنایا ہے ۔انہوں نے کہا کہ اقتصادی راہداری منصوبہ گیم چینجربننے جارہا ہے ، اقتصادی راہداری پر پڑوسی ملک نے واویلا کیا کہ متنازعہ علاقے پر بنایا جارہا ہے ، آزاد کشمیر اور گلگت بلتستان کوئی متنازعہ علاقہ نہیں ہیں بلکہ یہ پاکستان کا حصہ ہیں ،وفاقی وزیر خزانہ کا کہنا تھا کہ متنازعہ علاقہ مقبوضہ کشمیر ہے ، اسحق ڈار نے قومی اسمبلی سینیٹ اور پی ٹی وی ملازمین سمیت بجٹ میں ڈیوٹی دینے والے سرکاری ملازمین کو 3 اعزازی تنخواہیں دینے کا بھی اعلان کیا ۔ انہوں نے کہا کہ بجٹ منظوری کی آئینی ذمہ داری پوری کرنے پر ارکان پارلیمنٹ کا شکریہ ادا کرتا ہوں تاہم اپوزیشن کی کمی محسوس ہوئی ۔

مزید : صفحہ اول