کرا چی میں ہونے والی ہلاکتوں کی وفاقی حکومت ذمہ دار نہیں ، عابد شیر علی

کرا چی میں ہونے والی ہلاکتوں کی وفاقی حکومت ذمہ دار نہیں ، عابد شیر علی

اسلام آباد (آن لائن)وزیر مملکت پانی و بجلی عابد شیر علی نے کہا ہے کہ قدرتی آفات سے ہونے والی ہلاکتوں کی وفاقی حکومت ذمہ دار نہیں ہے ۔ کے الیکٹرک نے گزشتہ پانچ سالوں میں ایک میگاواٹ واٹ بجلی بھی سسٹم میں شامل نہیں کی ۔ وفاق 650 میگاواٹ بجلی معاہدے کے مطابق کے الیکٹرک کو دے رہا ہے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے پارلیمنٹ ہاؤس کے باہر میڈیا سے گفتگو کے دوران کیا ۔ انہوں نے کہا کہ کراچی میں ہونے والی ہلاکتوں پر دل دکھی ہے ۔ سندھ حکومت لوگوں کو ریلیف فراہم کرنے کے لئے متبادل انتظامات کرنے چاہئے تھے ہر معاملہ وفاق کے کھاتے میں ڈالنا اچھی بات نہیں ہے ۔انہوں نے کہا کہ کے الیکٹرک نے گزشتہ چند سالوں سے ایک میگاواٹ بجلی پیدا نہیں کی۔اس کے بدلے وفاق انہیں رقم فراہم کر رہا ہے ملک میں لوڈشیڈنگ ان علاقوں میں کر رہے ہیں جہاں لوگ بجلی بل ادا نہیں کرتے ۔ خیبرپختونخوا کے وزیر اعلی پرویز خٹک نے لوڈمیجمنٹ کی ذمہ داری خود لی تھی اب ان کی طرف سے جلاؤ گھیراؤ کی باتیں کرنا اچھی بات نہیں ہے ۔ کے پی کے میں لوڈشیڈنگ کے ذمہ دار صوبائی حکومت ہے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہم نے بجلی کی لوڈشیڈنگ شہروں میں چھ گھنٹے ، دیہاتوں میں آٹھ گھنٹے کی ہے اور صنعتوں کو بجلی کی لوڈشیڈنگ سے مستثنیٰ قرار دیا ہے جب ہماری حکومت آئی تھی تو اس وقت 13 ہزار میگاواٹ بجلی پیدا ہو رہی تھی ۔ موجودہ حکومت کی کوششوں سے بجلی کی پیداوار 16 ہزار 3 سو میگاواٹ تک پہنچ گئی ہے ۔ جس سے وفاقی حکومت کی بجلی بحران حل کرنے کے حوالے سے سنجیدگی کا اندازہ لگایا جا سکتا ہے ہم 2017 تک بجلی کی لوڈشیڈنگ سے چھٹکارا حاصل کر لیں گے

مزید : صفحہ اول