جعلی ادویات تیار و فروخت کرنیوالے موت کے سوداگروں کی جگہ جیل ہے ‘ شہباز شریف

جعلی ادویات تیار و فروخت کرنیوالے موت کے سوداگروں کی جگہ جیل ہے ‘ شہباز شریف

 لاہور(جنرل رپورٹر)وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف نے کہاہے کہ جعلی ادویات تیاراو رفروخت کرنے والے انسانیت کے دشمن ہیں۔ جعلی ادویات تیار کرنے کا مکروہ دھندہ کرنیوالوں کیخلاف بلا امتیاز کریک ڈاؤن جاری رکھا جائے ۔انسانی زندگیوں سے کھیلنے والے موت کے سوداگروں سے کوئی رعایت نہیں ہوگی اورایسے قبیح دھندے میں ملوث افراد کی جگہ جیل ہے۔جعلی ادویات بنانے او رفروخت کرنیوالوں کے غیر مقدس اتحاد کے خاتمے کیلئے آخری حد تک جاؤں گا ۔وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے ان خیالات کا اظہار ویڈیولنک کے ذریعے سول سیکرٹریٹ میں اعلیٰ سطح کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ، جس میں جعلی او رغیر معیاری ادویات کی تیاری و فروخت کیخلاف جاری کریک ڈاؤن پرپیشرفت کا تفصیلی جائزہ لیا گیا۔ وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ انسانی زندگیو ں سے کھیلنے کا مکروہ دھندہ ہر قیمت پر روکیں گے۔جعلی ادویات تیار کرنیوالی فیکٹریوں کے مالکان کیخلاف سخت ترین کارروائی عمل میں لائی جائے تاکہ ان کی آئندہ نسلیں بھی اس مکروہ دھندے کا سوچ بھی نہ سکیں۔وزیراعلیٰ نے متعلقہ حکام کو ہدایت کی کہ صوبے میں ڈرگ انسپکٹرز کی خالی آسامیاں فوری پر کی جائیں جبکہ نئی آسامیوں پر ڈرگ انسپکٹرز کی بھرتی کیلئے فوری اقدامات اٹھائے جائیں اوراس ضمن میں این ٹی ایس کے ذریعے بھرتیوں کا جائزہ لیا جائے ۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب میں خود مختار ڈرگ اتھارٹی بنائی جائے گی اس ضمن میں تمام ضروری اقدامات جلد سے جلد مکمل کیے جائیں ۔وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ لاہور ، فیصل آباداور راولپنڈی کی ڈرگ ٹیسٹنگ لیبز کو آؤٹ سورس کرنے کا کام تیز کیاجائے ۔وزیراعلیٰ نے کہا کہ جعلی ادویات کی تیاری میں جو بھی ملوث ہواس کے خلاف بلاامتیاز ایکشن لیا جائے ، کیونکہ ایسے افراد سخت ترین سزا کے حقدار ہیں اور حکومت جعلی ادویات کے دھندے میں ملوث افراد سے آہنی ہاتھوں سے نمٹے گی۔وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ ادویات تیار کرنے والی فیکٹریوں کی باقاعدہ انسپکشن کی جائے اوروہاں پر ادویات کی تیاری اورانہیں آگے ترسیل کرنے کے حوالے سے وضع کردہ معیار کے مطابق تمام ضروری احتیاطی اقدامات کی پابندی یقینی بنائی جائے ۔وزیراعلیٰ نے ڈرگ انسپکشن مانیٹرنگ سسٹم پر عملدر آمد کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ لاہورسے شروع کیے جانے والے اس ڈیجیٹل نظام کا دائرہ کار پنجاب کے دیگر اضلاع تک پھیلایا جائے ۔وزیراعلیٰ نے جعلی ادویات کے خلاف موثر کارروائی پر ٹاسک فورس کے حکام خصوصاً پارلیمانی سیکرٹری خواجہ عمران نذیر اور ایم پی اے قاضی عدنان فرید کو شاباش دیتے ہوئے کہا کہ جو اچھا کام کرے گا اس کی بھرپور حوصلہ ا فزائی کی جائے گی جبکہ فرائض میں غفلت برتنے یا اپنی ذمہ داری ادا نہ کرنے والوں کی بازپرس ہوگی۔ سیکرٹری صحت پنجاب نے جعلی ادویات کیخلاف کریک ڈاؤن کے حوالے سے ٹاسک فورس کی کارکردگی سے متعلق تفصیلی بریفنگ دی۔ مشیر صحت خواجہ سلمان رفیق، پارلیمانی سیکرٹری صحت خواجہ عمران نذیر ، چیف سیکرٹری ،انسپکٹر جنرل پولیس،اراکین اسمبلی ، عدنان فرید، ڈاکٹر نادیہ عزیز اور متعلقہ حکام نے اجلاس میں شرکت کی۔وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے ویڈیولنک کے ذریعے سول سیکرٹریٹ میں منعقدہ اجلاس کے دوران رمضان پیکیج کے تحت عوام کو ریلیف کی فراہمی کے حوالے سے کیے جانے والے اقدامات کا جائزہ لیا۔ وزیراعلیٰ نے رمضان المبارک کے دوران رمضان بازاروں کے ساتھ عام مارکیٹوں وبازاروں میں معیاری اشیائے ضروریہ ،پھل اورسبزیوں کی مناسب قیمت پر فراہمی کے حوالے سے متعلقہ حکام اور محکموں کے سربراہان کو ضروری ہدایات دیں۔اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعلیٰ شہبازشریف نے کہاکہ پنجاب حکومت کے موثر اقدامات کے باعث رمضان بازاروں میں عوام کومعیاری اشیائے خورد ونوش سستے داموں دستیاب ہیں اورلوگوں کی بڑی تعدادرمضان بازاروں سے خریداری کر رہی ہے۔اربوں روپے کے تاریخی رمضان پیکیج کاعوام کو فائدہ پہنچ رہا ہے ۔ضرورت اس امر کی ہے کہ رمضا ن بازاروں کی مانیٹرنگ کا سلسلہ جاری رکھاجائے اور صوبائی وزراء ، مشیران وسرکاری حکام رمضا ن بازاروں کے باقاعدگی سے دورے جاری رکھیں۔انہوں نے کہا کہ رمضا ن بازاروں میں سکیورٹی کے فول پروف انتظامات ہونے چاہئیں۔ انہوں نے کہا کہ کسی بھی رمضا ن بازار میں اشیائے ضروریہ کی عدم دستیابی کی شکایت پیدا نہیں ہونی چاہیے بلکہ وافر سپلائی کے حوالے سے تمام ضروری اقدامات پہلے سے مکمل ہونے چاہئیں۔انہوں نے کہا کہ ملک کی تاریخ میں پہلی بار شوگر ملز مالکان سے بات چیت کے ذریعے چینی کی قیمتوں میں خاطر خواہ کمی کی گئی ہے اوررمضان بازاروں میں چینی 52روپے کلودستیاب ہے ۔انہوں نے کہا کہ رمضا ن بازاروں میں تعینات ڈیوٹی سے غیر حاضر رہنے والے اہلکاروں کیخلاف کارروائی کی جائے ۔ایڈیشنل چیف سیکرٹری بھکر، خوشاب اور میانوالی کے رمضا ن بازاروں کے دورے کر کے انتظامات کا جائزہ لیں اورجہاں بہتری کی گنجائش ہے اسے فی الفور بہتر کیا جائے ۔عوام کو ریلیف کی فراہمی میں میرا نصب العین ہے اوراس ضمن میں پنجاب حکومت کے موثر اور بروقت اقدامات کے مثبت نتائج سامنے آرہے ہیں اوررمضان بازاروں کے ساتھ عام مارکیٹوں میں بھی معیاری اشیائے ضروریہ مناسب قیمتوں پر دستیاب ہیں ۔ وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف نے پنجاب اسمبلی کے اجلاس میں شرکت کی۔وزیراعلیٰ اسمبلی پہنچے توصوبائی وزرا ء اور اراکین اسمبلی نے ان کا پرتپاک استقبال کیا۔وزیراعلیٰ نے اپنے اسمبلی چیمبر میں اراکین صوبائی اسمبلی سے ملاقاتیں کیں اوران کے مسائل سنے اوران کے حل کیلئے موقع پر ہی ہدایات جاری کیں۔ وزیراعلیٰ جب پنجاب اسمبلی کے اجلاس میں شرکت کیلئے ایوان میں داخل ہوئے تو مسلم لیگ (ن) کے اراکین اسمبلی نے کھڑے ہوکران کا استقبال کیا اور’’ شیر آیا۔۔۔شیر آیا‘‘ کے نعرے لگائے۔اراکین اسمبلی نے ڈیسک بجاکر وزیراعلیٰ کو خوش آمدید کہا۔وزیراعلیٰ نے پنجاب اسمبلی کے ایوان سے نئے مالی سال 2015-16ء کے بجٹ کی منظوری پرصوبائی وزیر خزانہ ڈاکٹر عائشہ غوث پاشا کو مبارکباد دی۔وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف سے یہاں مختلف اضلاع سے تعلق رکھنے والے مسلم لیگ(ن) کے اراکین اسمبلی نے ملاقات کی۔وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ شفافیت اوراعلی معیار کیساتھ برق رفتاری سے منصوبوں کی تکمیل مسلم لیگ(ن) کی حکومت کا طرۂ امتیاز ہے ۔ مسلم لیگ(ن) کی حکومت نے محنت،دیانت اورامانت کا کلچر متعارف کرایا ہے ۔کوئی ایک پائی کی بھی کرپشن کاالزام نہیں لگاسکتا۔ہمارا ہر قدم عوام کی فلاح وبہبود اورانہیں ریلیف کی فراہمی کیلئے اٹھ رہا ہے ۔انہوں نے کہا کہ منتخب نمائندے عوام کے مسائل کے حل کیلئے دن رات ایک کردیں ۔ وزیراعلیٰ سے ملاقات کرنیوالے اراکین صوبائی اسمبلی میں مہر اعجاز احمد اچلانہ،رانا محمود الحسن، اویس قاسم خان ،میاں محمد منیر ،رامیش سنگھ اوردیگر شامل تھے۔ اس موقع پر ایم پی اے منشاء اللہ بٹ بھی موجود تھے ۔

مزید : صفحہ اول

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...