کراچی ‘ گرمی سے مزید 24افراد جاں بحق ‘ تعداد 612ہو گئی

کراچی ‘ گرمی سے مزید 24افراد جاں بحق ‘ تعداد 612ہو گئی

کراچی (خصوصی رپورٹ)کراچی میں گرمی اور حبس سے مزید 24 افراد جاں بحق ، تین روز میں ہلاکتوں کی تعداد 612 ہوگئی ، پاک فوج نے ہیٹ سٹروک مینجمنٹ کیمپ قائم کر دیا۔کراچی میں پڑنے والی بلا خیز گرمی اب تک 612 افراد کی جان لے چکی ہے ، 80فیصد اموات گرمی ، حبس اور ہیٹ سٹروک کے باعث ہوئیں ، جناح ہسپتال کے وارڈز میں لوڈشیڈنگ سے بے حال مریضوں کے تیمار داروں نے احتجاجی مظاہرہ کیا۔شہر قائد میں لوڈ شیڈنگ ،گرمی ، گھٹن اور ہیٹ سٹروک کے باعث سیکڑوں مریض دم توڑ چکے ہیں۔ بیشتر علاقوں میں گزشتہ روز باران رحمت برسی تو سہی لیکن شدید گرمی کے باعث زندگی خاموشی سے موت کو خراج دیتی رہی۔ گزشتہ تین دن سے کراچی والوں پر گرمی قہر ڈھا رہی ہے۔ شہر کے سرکاری ہسپتال لاشوں سے بھرے پڑے ہیں۔ گرمی سے متاثرہ سب سے زیادہ افراد جناح ہسپتال لائے گئے جبکہ عباسی شہید ہسپتال، سول ہسپتال، لیاری جنرل ہسپتال اور سندھ گورنمنٹ ہسپتال نیو کراچی میں گرمی سے جاں بحق افراد کی لاشیں لائی گئیں۔ گرمی اور حبس سے مرنے والوں کی تعداد اتنی بڑھ گئی کہ ان کے لیے سٹریچرز بھی کم پڑ گئے۔متاثرہ مریضوں کے اہل خانہ کا کہنا ہے کہ جان لیوا گرمی کو سہنا مشکل ہو گیا ہے۔ جناح ہسپتال کی ترجمان ڈاکٹر سیمی جمالی کہتی ہیں اتنے مریضوں کو ایک ساتھ دیکھنا مشکل ہے۔ جناح ہسپتال کے کینسر وارڈ میں بجلی نہ ہونے سے مریضوں کے تیمار دار سراپا احتجاج بن گئے ، کینسر وارڈ میں داخل مریضوں کے اہل خانہ نے احتجاجی مظاہرہ بھی کیا۔ صوبائی وزیر صحت جام مہتاب کا کہنا ہے تمام سرکاری ہسپتال ریڈ الرٹ ہیں ، دواؤں کی فراہمی کوئی مسئلہ نہیں۔ سرکاری ہسپتالوں میں گرمی کی شدت سے جاں بحق ہونے والے افراد میں زیادہ تعداد ساٹھ سال سے زائد عمر کے افراد تھے جن میں خواتین بھی شامل تھیں۔ پاک فوج کے مطابق حیدرآباد ، پنوعاقل ، چھور ، جامشورو ، بدین اور سہون شریف میں ریلیف کیمپ قائم کیے گئے ہیں جبکہ ترجمان کا کہنا ہے کہ رینجرز ٹریننگ سینٹر اینڈ کالج ٹول پلازہ ، سندھ رینجرز ہسپتال نارتھ ناظم آباد ، ہیڈ کوارٹر 53 ونگ بلدیہ ، ہیڈ کوارٹر 93 ونگ پیپلز فٹ بال گراؤنڈ ، 91 ونگ سائٹ ، 72 ونگ کالا پل ، 8 ونگ جامعہ ملیہ ، 82 ونگ مظفر آباد کالونی ، 63 ونگ جامعہ کراچی اور 44 ونگ نارتھ کراچی میں کیمپس قائم کیے گیے ہیں۔

مزید : صفحہ اول