عرب ملک میں رہنے والے غیر ملکیوں کے لئے انتہائی بری خبر،خلیجی حکومت وعدہ کرکے مکر گئی

عرب ملک میں رہنے والے غیر ملکیوں کے لئے انتہائی بری خبر،خلیجی حکومت وعدہ ...
عرب ملک میں رہنے والے غیر ملکیوں کے لئے انتہائی بری خبر،خلیجی حکومت وعدہ کرکے مکر گئی

  

دوحہ (مانیٹرنگ ڈیسک) قطر کی طرف سے موجودہ کفالہ سسٹم کو سال 2015 میں ختم کرنے اور اس نظام میں اصلاحات کرنے کا معاملہ کھٹائی میں پڑ گیا ہے اور غیر ملکی ملازمین کو یہ خوشخبری جلدی ملنے کی امید نظر نہیں آ رہی۔

عرب اخبار الشرق کا کہنا ہے کہ ملک کی شوریٰ کونسل نے نئے قانون کی جلد پارلیمنٹ میں منظوری کو مشکل قرار دیتے ہوئے اس پر مزید غوروخوض کا عندیہ دیا ہے۔ اخبار کے مطابق کونسل کے چئیرمین محمد بن مبارک کا کہنا ہے کہ اصلاحات کے معاملے میں زیادہ جلدی کی ضرورت نہیں ہے اور نہ ہی اصلاحات کی کوئی فوری ضرورت ہے۔ اس سے پہلے رواں سال مئی میں قطر کے وزیر برائے لیبر نے امید ظاہر کرتے ہوئے کہا تھا کہ 90 فیصد امکان ہے کہ سال 2015 کے اختتام تک کفالہ سسٹم کا خاتمہ کر کے نئے قوانین متعارف کروا دئیے جائیں گے۔

کفالہ سسٹم کو غیر ملکی ملازمین اور خصوصاً تعمیراتی شعبے میں کام کرنے والے مزدوروں کے استحصال کا نظام قراردیا جاتا رہا ہے اور اس پر سخت تنقید کی جاتی رہی ہے، اسی تنقید کے پیش نظر قطری حکام نے اس کے خاتمے کا عندیہ دیا تھا، لیکن اس کام میں تاخیر کی اطلاعات غیر ملکی ملازمیں اور خصوصاً مزدوروں کے لئے بری خبر ثابت ہوئی ہیں ۔

مزید : ڈیلی بائیٹس