ہمارا الگ صوبہ ہوتا تو آج جمشید دستی جیل میں نہ ہوتا، محمد ابراہیم خان

ہمارا الگ صوبہ ہوتا تو آج جمشید دستی جیل میں نہ ہوتا، محمد ابراہیم خان

  

شجاع آباد (نمائندہ خصوصی) تحریک انصاف کے رہنماء سابق ایم پی اے محمد ابراہیم خان نے روزنامہ پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ رکن قومی اسمبلی جمشید خان دستی پر جھوٹے(بقیہ نمبر50صفحہ12پر )

مقدمات اور گرفتاری سرائیکی وسیب کیلئے پیغام ہے کہ آج ہمارا علیحدہ صوبہ ہوتا تو مظلوم غریب عوام کی ترجمانی کرنے والا جمشید خان دستی جیل نہ ہوتاجمشید خان دستی کی آواز کو حکومت دبانا چاہتی ہے۔ جمشید خان دستی کی ملاقات کیلئے ڈیرہ غازی خان گیا وہاں پرجمشید خان دستی کے چاہنے والے ہزاروں افراد موجود تھے اور رہائی کی انتظار میں تھے تو معلوم ہوا کہ جمشید خان دستی کے خلاف سانحہ ماڈل ٹاؤن میں اشتعال انگیز تقریر کی تھی جس کی وجہ سے اس جھوٹے مقدمہ میں گرفتاری ڈال دی جس کی وجہ سے رہائی نہ ہو سکی ۔ موجودہ حکومت نے پروڈکشن آڈر کے باوجود بھی نو منتخب رکن قومی اسمبلی جمشید خان دستی کو نہ چھوڑا یہ کیسی جمہوریت ہے ۔

ابراہیم خان

مزید :

ملتان صفحہ آخر -