شانگلہ، 6سالہ معصوم بچی سے بداخلاقی کے بعد قتل، ملزم گرفتار

شانگلہ، 6سالہ معصوم بچی سے بداخلاقی کے بعد قتل، ملزم گرفتار

  

الپوری (ڈسٹرکٹ رپورٹر)شانگلہ کے علاقے شنگ میں انسانیت سوز واقعہ پیش،درندہ صفت سفاک قاتل نے چھ سالہ بچی مدیحہ طارق کو ہوس کا نشانہ بنانے کے بعد گلا دبا کر قتل کردیا ، درندے نے معصوم مدیحہ کو قتل کرنے کے بعد لاش بوری میں بند کرکے بند گلی پھینک دی ، پولیس نے لاش برامد کر دی ، مدیحہ قاری طارق کی بیٹی تھی۔پولیس نے ملزم کو گرفتار کر لیا ہے گرفتار ملز م کا نام جمریز بتایا جاتا ہے۔تفصیلات کے مطابق شانگلہ کے علاقہ شنگ میں قاری طارق کی بیٹی دس بجے صبح سے لاپتہ ہوئی شام چاربجے مدیحہ کی لاش ملی جسے بوری میں لپیٹ کر رکھا گیا تھا مقامی افراد نے بچی کا لاش لے کر بشام تحصیل ہیڈکوارٹر ہسپتال لے گئی تاہم لیڈی ڈاکٹر کی عدم موجودگی پر ڈاکٹروں کی ٹیم نے لاش پوسٹ مارٹم کیلئے ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال الپوری بھجوایا۔پوسٹ مارٹم، رپورٹ میں انکشاف ہوا کہ بچی کو پہلے ریپ کا نشانہ بنایا گیا پھر اس کا گلہ دبا کر قتل کیا گیا بشام پولیس کے مطابق بچی کی چپل ملزم کے گھر سے برامد ہوئی جبکہ ملزم ماضی میں بھی اس قسم کے واردات میں ملوث رہا ہے۔لوگوں میں سخت غم وغصہ پھیل گیا ہے علاقہ کی عوام نے ڈی پی او شانگلہ اور حکومت سے ملزم کے خلاف سخت کارروائی کا مطالبہ کیا ملزم کو سر عام پھانسی دیکر دوسروں کیلئے نشانہ عبرت بنائیں۔ مقامی لوگوں کا کہنا تھا کہ جمعراز جس کو پو لیس نے گرفتار کر لیا ہے یہ اس کا اس طرح کا چوتھا واقعہ ہے۔ مقامی لوگوں نے مطالبہ کیا ہے کہ ملزم کا مقدمہ فوجی عدالت میں چلا یا جا ئے اور ملزم کو سرعام پھانسی دے کر عبرت ناک سزا دی جا ئے۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -